.

سعودی عرب میں زراعت کے فروغ کے لیے’یہ اس کا موسم ہے‘ کےعنوان سے مہم کا آغاز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

کل جمعرات کو سعودی وزارت ماحولیات ، پانی اور زراعت نے سعودی عرب میں زرعی شعبے کی مارکیٹنگ کو فروغ دینے کے لیے "یہ اس کا موسم ہے" کے عنوان سے مہم شروع کرنے کا اعلان کیا ہے۔ یہ مہم مملکت میں زرعی شعبے کی سطح پر ایک اہم چیلنج کی نمائندگی کرتی ہے۔ اس مہم کے ذریعے سال بھر کاشت کی جانے والی اجناس، سبزیوں اور پھلوں کی ترویج اور ان کے بارے میں زیادہ سے زیادہ آگاہی فراہم کرنے کے بارے میں اس مہم میں روشنی ڈالی جائے گی۔

اس سلسلے میں وزارت زراعت کے سرکاری ترجمان احمد المسنید نے ’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘ کو بتایا کہ "یہ اس کا موسم ہے" مہم کا آغاز دراصل زرعی شعبے کی مارکیٹنگ کو فروغ دینا ہے۔ یہ مہم مملکت میں زرعی شعبے کی سطح پر ایک اہم چیلنج کی نمائندگی کرتی ہے۔ اس مہم کے ذریعے سال بھر کاشت کی جانے والی اجناس، سبزیوں اور پھلوں کی ترویج اور ان کے بارے میں زیادہ سے زیادہ آگاہی فراہم کرنے کے بارے میں اس مہم میں روشنی ڈالی جائے گی۔ اس مہم کے دوران یہ واضح کیا جائےگا کہ سعودی عرب زراعت کےمیدان میں خود کفیل ہوچکا ہے اور اب مملکت علاقائی اور عالمی سطح پر زراعت کی مارکیٹنگ کے لیے کام کررہا ہے۔

وزارت کے اعدادوشمار سے ظاہر ہوتاہے کہ کھجوروں کے علاوہ دیگر پھلوں کی مقامی پیداوار میں بھی سعودی عرب خود کفیل ہے۔ مملکت میں کھجور کے سوا مختلف اقسام کے دیگر پھلوں کا پیداواری تناسب 8004 ٹن تک جا پہنچی ہے۔ گرما کی پیداوار81 فی صد، انگور 59 فی صد ، آم میں 52 فی صد ، انار 28 فی صد ، لیموں 25 فی صد ، اسٹرابیری اور بہت سے پھلوں کی فصلیں سال بھر کاشت ہوتی ہیں۔