.

کرونا کی تبدیل شدہ شکل 12 سے 18 سال کی عمر کے افراد کے لیے خطرناک ہے: وزارت صحت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی وزارت صحت نے تصدیق کی ہے کہ کرونا وائرس کی ایک تبدیل شدہ شکل 12-18 سال کی عمر والے افراد کے لیے زیادہ خطرناک ہوسکتی ہے۔ وزارت صحت نے مشورہ دیا ہے کہ شہری تبدیل شدہ وائرس سے بچنے کے لیے ویکسین لگوائیں کیونکہ مطالعے سے ثابت ہوا ہے کہ ویکسین محفوظ ہے اور اس عمر کے گروپ کے لیے کارآمد ہے۔

وزارت نے "ٹویٹر" پر اپنے آفیشل اکاؤنٹ پر ایک ٹویٹ میں انکشاف کیا مملکت میں ہونے والے سروے کے نتائج سے معلوم ہوا ہے کہ 12 سے 18 سال عمر کے افراد جو وائرس (کووڈ - 19) میں مبتلا تھے میں سے 99 فی صد مریضوں کو ویکسین نہیں ملی تھی۔ سعودی عرب میں ویکسینشن کا عمل شروع ہونے کے بعد 28 دسمبر 2020 سے 7 جون 2021 تک عمر کے اس طبقے کے افراد کو ویکسین نہیں لگائی گئی مگر اب بڑے پیمانے پر ویکسین دی جا رہی ہے۔

وزارت نے پچھلے چوبیس گھنٹوں کے دوران مملکت میں کرونا واقعات کے ایسے کیسز کا اعلان کیا ہے جو وبا کی ایک تبدیل شدہ شکل سے متاثر ہیں۔ چوبیس گھنٹوں کے دوران 1534 نئے مریضوں کی شناخت کی گئی جب کہ 1487 صحت یاب ہوگئے۔مملکت میں کرونا کے فعال کیسز کی تعداد 12174 ہے۔