.
یمن اور حوثی

حوثی ملیشیا کے مملکت پر ڈرون حملے، اردن اور عرب پارلیمنٹ کی مذمت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عرب پارلیمنٹ اور اردن نے دہشت گرد حوثی ملیشیا کی جانب سے سعودی عرب کے جنوبی علاقوں پر کیے جانے والے ڈرون حملوں کی مذمت کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا ہے کہ حوثی ملیشیا ایک دہشت گرد تنظیم ہے جسے دنیا اور خطے میں دہشت گردی اور افراتفری پھیلانے کے لیے تہران سے چلایا جا رہا ہے۔

گذشتہ روز ایک بیان میں عرب پارلیمنٹ نے بین الاقوامی برادری پر زور دیا کہ وہ حوثی ملیشیا کے مجرمانہ اقدامات کا مقابلہ کرنے کے لیے اپنی ذمہ داریاں ادا کریں۔ حوثیوں کی کارروائیوں کی وجہ سے خطے اور بین الاقوامی امن اور سلامتی کو خطرہ لاحق ہے۔ بیان میں مطالبہ کیا گیا کہ بین الاقوامی برادری ایسے اقدامات اٹھائے جن سے ایرانی سرپرستی میں ان دہشت گرد گروہوں اور انکی مالی امداد کرنے والوں کا ہاتھ روکا جا سکے۔

بیان میں اس ضمن میں سنجیدہ اقدامات اٹھانے پر زور دیتے ہوئے سعودی عرب کے ساتھ مکمل حمایت اور یکجہتی کا یقین دلاتے ہوئے کہا گیا کہ مملکت کی سکیورٹی عرب قومی سلامتی کا لازمی جزو ہے۔

یمن کی آئینی حکومت کی رٹ بحالی کے لیے سعودی عرب کی قیادت میں سرگرم عرب فوجی اتحاد کی فضائیہ کی چوکسی کی تعریف کی اور کہا کہ ان کی بروقت کارروائیوں سے حوثی باغیوں کے سعودی عرب کی سمت بھیجے جانے والے بارود سے لدے ڈرونز کو ہدف تک پہنچنے سے پہلے ہی ناکارہ بنایا جا رہا ہے۔