.

صحت کے ایس اوپیز کے تحت مکہ معظمہ میں معتمرین کے لیے اڑھائی لاکھ کمرے تیار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

حج سیزن کے اختتام کے بعد سعودی عرب کی حکومت نے بیت اللہ کو عمرہ کی زیارت کے لیے کھولنے کا اعلان کیا ہے۔ دوسری طرف مکہ معظمہ میں کرونا وبا کے پیش نظر صحت کے ایس اوپیز پرعمل درآمد کرتے ہوئے معتمرین کے لیے اڑھائی لاکھ سے زاید کمرے مختص کیے ہیں۔

خیال رہے کہ سعودی عرب کی حکومت نے آئندہ ماہ محرم الحرام کے آغاز سے عمرہ سیزن کی بحالی کا فیصلہ کیا ہے۔

اسی ضمن میں حج وعمرہ کمیشن کے رکن ھانی العمیری نے العربیہ ڈاٹ نیٹ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ عازمین عمرہ کے اسقبال کے لیے مکہ مکرمہ میں دو لاکھ 60 ہزار سے زاید کمرے بک کیے گئے ہیں۔ یہ کمرے مختلف ہوٹلوں کے اندر ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں العمیری کا کہنا تھا کہ عمرہ سیزن دوبارہ شروع کرنے کے ساتھ ساتھ حکومت نے زائرین اور معتمرین کی صحت وسلامتی کو یقینی بنانے کے لیے صحت کے پروٹوکول کا نفاذ کیا ہے۔ معتمرین کے درمیان سماجی فاصلے کو یقینی بنانے اور چہرے کو ماسک سے ڈھانپنے سمیت تمام دیگر ضروری ضوابط پرعمل درآمد کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ عمرہ زائرین کے لیے مختص ہوٹلوں میں معتمرین کی رہ نمائی کے لیے گائیڈ مقرر کیے جائیں گے۔

ہوٹلوں کے دس فی صد کمرے کرونا کے مشتبہ مریضوں کے لیے مختص کیےگئے ہیں۔ ایک کمرے میں دو سے زاید افراد کو نہیں رکھا جائے گا۔