.

سعودی شہری کی الباحہ کے قدرتی حسن اور ثقافت کو اجاگر کرنے کاوش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایک سعودی نوجوان انجینیر نے ’الباحہ‘ خطے کے قدرتی مقامات، تاریخی نشانیوں اس کے ثقافتی ورثے اور فطرت کے مناظر کے لیے ایک پلیٹ فارم تیار کیا ہے جسے "ڈسکور الباحہ" کا نام دیا گیا۔

سعودی انجینیر کا تیار کردہ یہ پلیٹ فارم سوشل میڈیا پر غیر معمولی طور پر مقبول ہوا ہے۔ اس پلیٹ فارم کا مقصد الباحہ میں سیاحت کے امکانات کے بارے میں دنیا کو آگاہ کرنا اور وہاں پر موجود تاریخی، ثقافتی اور قدرتی اہمیت کے حامل مقامات کی نشاندہی کرنا ہے۔

"ڈسکور الباحہ" پلیٹ فارم کے جنرل سپروائزر انجینیر ہانی رجب نے العربیہ ڈاٹ نیٹ سے اس منصوبے کے خیال کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا: "ڈسکور الباحہ" کا آغاز سیاحت اور ورثہ کی مارکیٹنگ کے مقصد سے کیا گیا ہے۔ اس پلیٹ فارم کے ذریعے سعودی عرب کے جنوب مغرب میں واقع الباحہ خطے کے تاریخی،قدرتی اور ثقافتی ورثے کو متعارف کروا کر سیاحوں کو طرف راغب کرنا ہے۔

ھانی رجب
ھانی رجب

انہوں نے مزید کہا کہ ہم ایک سعودی ٹیم کی شکل میں کام کر رہے ہیں جو علاقہ کے ثقافتی اور قدرتی خزانوں کو اجاگر کرنے کے جذبہ کے ساتھ کام کرتی ہے۔ ہمارا مقصد جدید ٹیکنالوجی کو اپنے ورثے ، اس کے آثار قدیمہ کی خوبصورتی اور اس کی دلکش فطرت کو متعارف کرانے کے لیے استعمال میں لانا اور وژن 2030کے اہداف کے مطابق آگے بڑھنا ہے۔

حجاز گارڈن

انجینیر ہانی رجب نے کہا کہ الباحہ 9 گورنریوںاور 42 مراکز پر مشتمل ہے۔ اس کے 1200 دیہات ہیں جبکہ اسے ماضی میں پانی کی فراوانی اور زراعت کی کثرت کی بہ دولت ’حجاز گارڈن‘ کہا جاتا تھا۔

انہوں نے کہا کہ الباحہ بہت سے تاریخی مقامات اپنے اندر محفوظ رکھے ہوئے ہے۔ یہاں کئی مشہور بازار ہیں۔ دستکاریاں اور کئی دوسری قدرتی اور ثقافتی اہمیت کے حامل اشہا ہیں۔ یہاں پر 25 مقبول مارکیٹیں ہیں جن میں سب سے اہم جمعرات کا بازار ہے۔ المندق میں ہفتہ کا بازار، بلجورشی، قلواہ میں اتوار کا بازار، المخوا میں منگل کا بازار اور العقیق میں جمعہ بازار، یادگاریں، قلعے، پرانی طرز تعمیر پر بنی عمارتیں، مختلف ورثہ والے دیہات کے علاوہ پارکس اور گھنے جنگلات بھی سیاحوں کی توجہ کا مرکز بن سکتے ہیں۔