.

ریڈ سی ڈویلپمنٹ کمپنی کا 10 لاکھ ’محفوظ گھنٹوں‘ کا جشن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کی طرف سے منظور کردہ ’ریڈ سی پروجیکٹ‘ کو شروع کیے چار سال گزر چکے ہیں۔ یہ منصوبہ دنیا کا سب سے پرجوش سیاحتی مقام پرہے جس نے تعمیراتی کام کے آغاز کے بعد پچھلے برسوں میں بہت سی کامیابیاں حاصل کی ہیں۔ ریڈ سی ڈویلپمنٹ کمپنی کی ٹیم اور اس کی انتظامیہ نے کامیابیوں کی کئی مراحل طے کیے ہیں۔ منصوبے سے منسلک 920 افراد پر مشتمل عملے نے ایک ملین محفوظ ’ورکنگ ہاور‘ مکمل کرلیے ہیں۔ پبلک انویسمنٹ فنڈ کی ملکیت ریڈ سی کمپنی نے ایک بڑے ہوائی اڈے کے منصوبے میں 3.7 کلومیٹر " ایف رن وے " 11 ماہ کے اندر مکمل کرنا ہے۔

ریڈ سی ڈویلپمنٹ کمپنی نے تصدیق کی کہ یہ کامیابی صحت اور حفاظت کے اعلیٰ ترین معیارات پر سختی سے عمل پیرا ہونے کی بدولت حاصل ہوئی ہے۔ کمپنی نے منصوبے کی تکمیل کے لیے نہ صرف بین الاقوامی مالیاتی کارپوریشن (آئی ایف سی) کے مقرر کردہ ملازمین کے تحفظ کے عالمی معیار پرعمل کیا ہے بلکہ کام کی جگہ پر مزدوروں کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لیے غیرمعمولی اور غیر مسبوق اقدامات کیے ہیں۔

اب تک اس منصوبے کا جتنا کام ہوا ہے اس کا ایک کامیاب اور اہم پہلو یہ ہے کہ اس میں اب تک کوئی جانی نقصان، جسمانی چوٹ ، صحت یا ماحولیاتی نقصان ، املاک کو نقصان ، یا آپریشنل رکاوٹ پیش نہیں آئی۔ کمپنی نے اپنے ملازمین اور کارکنوں کی حفاظت اور فلاح و بہبود کے لیے تمام ممکنہ اقدامات کیے اور منصوبے کے ایک ملین گھنٹے بہ حفاظت پایہ تکمیل کو پہنچ گئے ہیں۔

سال 2020 کے "مڈل ایسٹ میگا پراجیکٹس ایوارڈز" کے دوران جو اس سال دبئی کے رٹز کارلٹن ، جمیرا بیچ رہائش گاہ میں منعقد ہوا میں ریڈ سی ڈویلپمنٹ کمپنی کو اس کی پیشہ ورانہ حکمت عملی کے لیے اور کویڈ 19 کے اثرات ے بچاؤ کے لیے ایس اوپیز پرعمل درآمد کی بدولت دیا گیا۔ حالانکہ اس ایوارڈ کے لیے نامزد کمپنیوں کی تعداد 140 تھی

کمپنی کے ہیلتھ، سیفٹی اینڈ سیکورٹی ڈیپارٹمنٹ کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر برائن اسپارکر نے تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ان معیارات کو بلند کرنے کے اپنے عزم کے ذریعے ہم امید کرتے ہیں کہ اپنے پروجیکٹ سائٹ کے ہر کارکن کے تجربے کو لفظ اور معنی میں ایک مثبت تجربہ بنائیں گے۔

منصوبہ سعودی عرب کی مقامی معیشت اور پراجیکٹ ایریا کے ماحول کے لیے ایک اعلی قدر میں اضافہ کرے گا۔ دن بھر اس کی افرادی قوت کی صحت اور حفاظت کو برقرار رکھنا ایک بڑا چیلنج ہوسکتا ہے کیونکہ اس پروجیکٹ کا دور دراز مقام تمام کارکنوں اور ٹھیکیداروں کی حفاظت کو ہر وقت طبی مراکز کی قربت کو یقینی بنانا زیادہ مشکل بنا دیتا ہے۔