.

کون کون سے ممالک کے باشندے سعودی عرب کے سیاحتی ویزے کے اہل ہیں؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب نے کرونا وبا کی وجہ سے ڈیڑھ سال سے مملکت میں سیاحت پرعاید پابندی بہ تدریج اٹھانے کے ساتھ ہی اندرون اور بیرون ملک سیاحوں کی رجسٹریشن کی سہولت کے پیش نظرایک آن لائن ویب سائٹ بھی بنائی ہے۔ اس ویب پورٹل کے ذریعے سیاحت کے خواہش مند خواتین وحضرات اپنی رجسٹریشن کراسکتے ہیں۔ بیرون ملک موجود سیاح سعودی عرب کی سیاحت کے لیے اس ویب پورٹل کے ذریعے اپنی رجسٹریشن کراکے آسانی کے ساتھ سیاحتی ویزا حاصل کرسکتے ہیں۔

سعودی عرب کی وزارت سیاحت نے کرونا سے کافی حد تک محفوظ ہونے والے 49 ممالک کی فہرست جاری کی ہے جن کے باشندے مملکت کی سیاحت کے اہل ہیں۔

غیرملکی سیاح سعودی عوام کی پُرجوش مہمان نوازی، بھرپور ورثہ، متحرک ثقافت اور بھا کے پہاڑوں سے لے کر بحیرہ احمر کے ساحل تک پھیلے دلفریب مناظر اور ربع الخالی صحرا کی متحرک ریت کے نظاروں سے لطف اندوز ہوسکتے ہیں۔

سعودی عرب نے مملکت میں سیاحت کے لیے ویزے کی مدت 90 دن مقرر کی ہے۔ تاہم اس دوران صحت کے پروٹوکول اور ایس اوپیز پر سختی کے ساتھ عمل درآمد یقینی بنایا جائے گا۔ حکومت کی طرف سے منظور شدہ ویکسین کی پہلی دو خوراکیں لگوانے والے افراد سیاحتی ویزے کے حصول کے اہل ہیں۔

جن ممالک کے باشندوں کو سعودی عرب میں سیاحتی ویزے کا اہل قرار دیا گیا ہے ان میں امریکا، کینیڈا، اندورا، آسٹریا، بیلجیم، بلغاریہ، کروشیا، قبرص ، جمہوریہ چیک، ڈنمارک، ایسٹونیا، فن لینڈ، فرانس، جرمنی، یونان، نیدرلینڈز، ہنگری، آئس لینڈ، آئرلینڈ ، اٹلی ، لیٹویا، لیچنسٹائن، لیتھوانیا، لکسمبرگ، مالٹا، موناکو، مونٹی نیگرو، ناروے، پولینڈ، پرتگال، سلووینیا، یوکرین، برطانیہ، سوئٹزرلینڈ، سان مارینو، سپین، برونائی، چین (بشمول ہانگ کانگ اور مکاؤ) ، جاپان ، قازقستان، ملائیشیا، سنگاپور، جنوبی کوریا، اوشیانا، آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ شامل ہیں۔