.

حوثی ملیشیا کی طرف سے جنگ میں جھونکے640 یمنی بچے جاں بحق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں انسانی حقوق کے ادارے نے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ ملک میں ایرانی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا کی طرف سے جنگ میں جھونکے 640 بچے جاں بحق ہوئے۔ یہ اموات گذشتہ چھ ماہ کے دوران ہوئی ہیں۔

انسانی حقوق گروپ ’میون‘ کی طرف سے مرتب کرد ہ رپورٹ جسے "بچے بندوقیں نہیں‘ کا عنوان دیا گیا میں 13 سے 17 سال کی عمر کے بچوں کی فہرست جاری کی گئی ہے جو حوثی ملیشیا کی طرف سے جنگ میں جھونکے گئے اور جو لڑائی کے دوران جاں بحق ہوگئے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ دارالحکومت ڈاءریکٹوریٹ اور حوثی ملیشیا کے زیر تسلط علاقوں کے اسپتالوں سے ملنے والی معلومات کے مطابق گذشتہ چھ ماہ کے دوران لڑائی میں 340 بچے زخمی ہوئے۔

رپورٹ کے مطابق صنعا گورنر، ذمار اور حجہ میں گذشتہ چھ ماہ کے دوران لڑائی کے دوران 333 بچے لقمہ اجل بن گئے جب کہ 16 گورنریوں میں مجموعی طور پر 3،400 بچے زخمی ہوئے۔