.

جنوبی لبنان میں حزب اللہ کی سرنگوں کا نیٹ ورک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لبنانی ملیشیا حزب اللہ نے سرنگوں کا ایک نیٹ ورک بنا لیا ہے جو دارالحکومت بیروت اور البقاع کو ملک کے جنوب سے جوڑتی ہے۔ یہ بات اسرائیلی مرکزALMA کی جانب سے جاری ایک رپورٹ میں بتائی گئی ہے۔

رپورٹ کا عنوان "سرنگوں کی سرزمین" ہے۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ حزب اللہ ملیشیا نے سرنگوں کے مذکورہ نیٹ ورک کا منصوبہ 2006ء کی جنگ کے بعد ایرانیوں اور شمالی کوریا کی ایک کمپنی کی مدد سے شروع کیا تھا۔ رپورٹ کے مطابق حزب اللہ کی یہ سرنگیں غزہ کی پٹی میں فلسطینی تنظیم حماس کی سرنگوں سے کہیں بڑی ہیں۔ حزب اللہ کی سرنگوں کا نیٹ ورک سیکڑوں کلو میٹر طویل ہے۔ ان میں البقاع اور صیدا کے درمیان 45 کلو میٹر طویل سرنگ شامل ہے۔

اسرائیلی رپورٹ میں مزید بتایا گیا ہے کہ حزب اللہ کے زیر انتظام یہ سرنگیں اس حد تک وسیع ہیں کہ ان کے ذریعے فور وہیل ڈارائیو گاڑیاں ، ملیشیا کا ساز و سامان اور جنگجو منتقل ہوتے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق حزب اللہ کی سرنگوں میں کمانڈ اینڈ کنٹرول رومز، ہتھیاروں اور کمک کے گودام، زمینی ڈسپنسریاں اور ایسی گزر گاہیں شامل ہیں جو راکٹ اور توپ کے گولے داغنے کے لیے مختص ہیں۔