طالبان کے خطرے کی وارننگ دینے پراحمدی نژاد کو دھمکی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایران کے سابق صدر محمود احمدی نژاد نے ہفتے کو کہا ہے کہ انہوں نے افغانستان میں تحریک طالبان کے بڑھتے اثرو نفوذ اور ان کے خطرے کی وارننگ دی تو اس پر ایک ایرانی سیکیورٹی اہلکار نے انہیں دھمکی دی تھی۔ ان کا کہنا تھا کہ طالبان کے خطرے کی وارننگ دینے کے بعد ایک سیکیورٹی افسران کے پاس آیا اور کہا کہ ان کی اس دھمکی کے بعد ان کے اقارب اور ساتھیوں سے نمٹا جائے گا۔ احمدی نژاد کا یہ بیان ایران انٹرنیشنل کی ویب سائٹ پر شائع کیا گیا ہے۔

سائٹ نے ایک ویڈیو کلپ شائع کیا جس میں احمدی نژاد نے کہا کہ ان کے بیانات جنہوں نے سیکورٹی اہلکار کو دھمکی دینے پر اکسایا اس میں "کرپٹ سکیورٹی گینگ" پر بات کرنا بھی شامل ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایرانی سیکیورٹی نے مجھے دھمکی دی کیونکہ میں نے طالبان کے بارے میں خبردار کیا تھا۔ دو ہفتے پہلے ایک سینیر سیکورٹی اہلکار نے مجھ سے بات کی اور مجھ سے کہا تم طالبان اور کرپٹ سیکیورٹی گینگ کے بارے میں کیوں بات کر رہے ہو؟

انہوں نے مزید کہا کہ سیکیورٹی اہلکار نے ان سے کہا کہ ہم شدید دباؤ میں ہیں۔ اگر آپ نے یہ رویہ جاری رکھا تو ہمیں آپ کے رشتہ داروں اور آپ کے آس پاس کے لوگوں سے نمٹنا پڑے گا۔

سابق ایرانی صدر نے اس سیکیورٹی اہلکار کی شناخت ظاہر نہیں کی۔

غیر ملکی افواج بالخصوص امریکی افواج کے انخلاء کے آغاز کے ساتھ مئی میں بڑے پیمانے پر حملے کے آغاز کے بعد سے طالبان نے تیزی سے ملک کے بیشتر علاقوں پر اپنا تسلط مضبوط کرلیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں