.

کنگ عبدالعزیز لائبریری میں موجود دنیا کا واحد مخطوطہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی دارالحکومت ریاض میں واقع کنگ عبدالعزیز لائبریری میں علوم حدیث سے متعلق ایک ایسا مخطوطہ موجود ہے جو دنیا میں اس متن کا واحد معلوم نسخہ ہے۔ یہ مخطوطہ شمس الدین السخاوی رحمہ اللہ (وفات : 902ھ / 1497ء) کا ہے۔ السخاوی مصر میں سلطنت مملوک کے دور کے ایک عالم گزرے ہیں۔ ان کا شمار حدیث، تفسیر اور تاریخ کے شعبوں میں کام کرنے والے علمائے کرام میں ہوتا ہے۔ السخاوی کے مذکورہ مخطوطے کا عنوان "الإيضاح المرشد من الغي على حديث حبّب من دنياكم إليّ" ہے۔

اس مخطوطے کا تعلق 1190 ہجری سے ہے اور اس کا اندراج حدیث شریف کے علوم کے تحت کیا گیا ہے۔ یہ 14 اوراق اور 31 سطور پر مشتمل ہے۔

کنگ عبدالعزیز لائبریری کا قیام 1405هـ / 1985ء میں عمل میں آیا تھا۔ اس وقت سے یہ لائبریری مختلف کتابوں، مخطوطوں، نوادارت، دستاویزات، تصاویر، سکے اور کرنسیوں کی صورت میں تاریخی ورثے کو اکٹھا کرنے کا اہتمام کر رہی ہے۔ لائبریری قومی ورثے کے علاوہ عرب اور اسلامی ورثے کو بھی محفوظ کرنے کے لیے سرگرم عمل ہے۔ لائبریری محققین اور تحقیق میں دل چسپی رکھنے والوں کو محفوظ مواد سے استفادے کا موقع فراہم کرتی ہے۔ لائبریری میں 8000 سے زیادہ مخطوطے موجود ہیں۔ ان کا تعلق قرآن اور علوم قرآن، حدیث اور علوم حدیث، فقہ اور اُصول فقہ ، سیرت نبوی ﷺ ، وعظ و ارشاد، عربی زبان و ادب، تاریخ، فلسفہ اور منطق اور معارف عامہ سے ہے۔

اس مخطوطے میں مؤلف نے جو روش اپنائی ہے اس میں پہلے حدیث کو پڑھنے کے بعد حدیث کے راویوں کے ذکر کے ساتھ اس کی شرح بیان کی گئی ہے۔ مخطوطے میں حدیث کے کئی راویوں اور حدیث کے علماء کے مواقف بھی شامل کیے گئے ہیں۔ ان میں طبرانی، ضیافی، غزالی، زمخشری اور ترمذی جیسی شخصیات کے نام ہیں۔

مخطوطے کے مؤلف شمس الدين ابو الخير محمد بن عبد الرحمن بن محمد بن ابی بكر بن عثمان بن محمد السخاوی کو مصر کے شمال میں واقع علاقے "سخا" سے منسوب کیا جاتا ہے۔ وہ 831 ہجری میں پیدا ہوئے۔ وہ ایک مؤرخ ہونے کے علاوہ حديث ، تفسير اور ادب کے عالم تھے۔ السخاوی قاہرہ میں پیدا ہوائے اور وہاں زندگی گزاری۔ ان کی وفات مدینہ منورہ میں ہوئی۔ انہوں نے متعدد ملکوں کے سفر میں طویل وقت گزارا۔ السخاوی نے اپنی زندگی میں 200 سے زیادہ کتابیں لکھیں۔ ان میں "الضوء اللامع في أعيان القرن التاسع" اور "الإيضاح المرشد من الغي" مشہور ترین ہیں۔