.

سعودی عرب میں سیکیورٹی اہلکار کے قاتل کا سرقلم کردیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جمعرات کے روز جدہ میں سعودی وزارت داخلہ نے بتایا کہ سعودی شہری عبدالعزیز بن سعود المالکی کو ایک سیکیورٹی اہلکار کے قتل کے جرم میں دی گئی سزائے موت پر عمل درآمد کرتے ہوئے اس کا سر قلم کر دیاگیا ہے۔

سیکورٹی اہلکار سارجنٹ عبداللہ بن مشاری السبیعی کو اس کی ڈیوٹی کے دوران چاقو کے وار کرکے قتل کردیا گایا تھا۔ پولیس نے مجرم کو گرفتار کرلیا تھا۔ سیکیورٹی اہلکار کا قاتل ایک دہشت گرد تنظیم کا حامی اور سیکیورٹی اہلکاروں کی تکفیر کا مرتکب تھا۔

جمعرات کو وزارت داخلہ کے بیان میں کہا گیا ہے کہ سیکیورٹی حکام مذکورہ بالا مجرم کو گرفتار کرنے میں کامیاب رہی۔ تفتیش کے دوران اس نے جرائم کے ارتکاب کا اعتراف کیا۔ اسے خصوصی فوجداری عدالت میں بھیج دیا۔ فوج داری عدالت نے مجرم کو سزائے موت دی اور اپیل عدالت نے بھی سزا برقرار کھی اور سپریم کورٹ نے بھی سزا کی توثیق کی۔ آخر کار شاہی فرمان کی منظٖوری سے مجرم کو دی گئی سزا پر عمل درآمد کردیا گیا۔