.

عراق: کویت سے ملحقہ سرحدی علاقے سے امریکی فوجی اڈے پر راکٹ حملے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراقی سیکیورٹی ذرائع نے جمعہ کی رات کو بتایا کہ کویت کے ساتھ صحرائی سرحدی علاقے کے قریب ایک امریکی فوجی اڈے پر تین "کاتیوشا" راکٹ داغے گئے۔ یہ راکٹ سفوان کے علاقے میں الرفیعہ میں گرے۔ کویت کی مسلح افواج کا کہنا ہے کہ کویت کی سرحد کے اندر کوئی راکٹ نہیں گرا ہے۔

عراقی ذرائع نے بتایا کہ بصرہ گورنری کے سفوان علاقے میں دھماکے سنے گئے جہاں یہ بندرگاہ واقع ہے۔

ذرائع نے تصدیق کی کہ کویت کے ساتھ جریشان بارڈر کراسنگ پر امریکی فوجی اڈے کے آس پاس کے علاقے کو دو راکٹوں سے نشانہ بنایا گیا۔

ذرائع نے مزید کہا کہ تیسرا راکٹ جریشان بندرگاہ پر واقع امریکی فوجی اڈے کو پار کر گیا۔ ادھر کویت کے چیف آف اسٹاف نے عراق کے ساتھ سرحد پار سے 3 راکٹ حملوں سے متعلق میڈیا میں آنے والی خبروں کی تردید کی ہے۔

عراق میں ڈائریکٹوریٹ آف انرجی پولیس نے گذشتہ جولائی میں اعلان کیا تھا کہ اسے بصرہ میں ایک برقی اسٹیشن کے قریب داغے جانے کے لیے متعدد راکٹ ملے ہیں۔

عراق میں امریکی سفارت خانے اور امریکی افواج کے ٹھکانوں پر بار بار حملے ہوتے رہتے ہیں۔ واشنگٹن الزام عائد کرتا ہے کہ ان حملوں کے پیچھے عراقی حزب اللہ بریگیڈ اور ایران کے دوسرے حمایت یافتہ گروپ ملوث ہیں۔