.

’دھنوں کا طوفان‘ موسیقی میلہ سعودی عرب میں دھوم مچانے کو تیار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عالمی موسیقی اور ثقافتی تفریحی پلیٹ فارم ’مڈل بیسٹ‘ نے خطے کے سب سے بڑے اور دلچسپ میوزک فیسٹیول ’دھنوں کا طوفان‘ کی واپسی کا اعلان کیا ہے۔

یہ فیسٹیول 16 سے 19 دسمبر 2021 تک ریاض میں منعقد ہوگا۔ یہ موسیقی پروگرام اپنے سامعین کوایک منفرد اور دلچسپ تجربہ فراہم کرے گا۔ اس میں نمایاں بین الاقوامی ستاروں کی پرفارمنس، بین الاقوامی ڈانس پرفارمنس کے ساتھ ساتھ مقامی فنکارانہ پرفارمنس بھی شامل ہوگی۔ دھنوں کا طوفان میلے میں حصہ لینے والے مقامی اور غیرملکی فنکاروں کی تفصیلات جلد منظر عام پر آ جائیں گی۔

اس اعلان پر تبصرہ کرتے ہوئے موسیقی میلے کے ڈائریکٹر آپریشنز اور ٹیلنٹ ریزرویشنز کے ڈائریکٹر طلال البہیتی نے کہا کہ ہمیں (دھنوں کے طوفان) کی واپسی کا اعلان کرتے ہوئے بے حد مسرت ہوئی ہے۔ ہمیں خوشی ہے کہ ہم اس میلے میں فن کی دنیا میں نمایاں کار کردگی کا مظاہرہ کرنے والے مہان اور عالمی سطح پر مقبول فنکاروں اور تخلیق کاروں کو خوش آمدید کہیں گے۔

انہوں نے کہا کہ سنہ 2019ء میں ہمارا افتتاحی موسیقی میلہ سعودی عرب میں موسیقی اور تفریحی منظرکے لیے اہم تھا جس نے ہمیں دنیا کے نقشے پرنمایاں مقام پر کھڑا کیا اور سعودی عرب اور خطے میں بھرپور میوزیکل کلچر کو اجاگر کرنے کا ذریعہ ثابت ہوا۔ اس میلے نے سعودی عرب میں عوامی سطح پر موسیقی کی طرف عوام کے غیرمعمولی رحجان کو بھی نمایاں کیا۔ اس کے بعد ہم موسیقی اور تخلیقی صلاحیتوں کے کلچر کو فروغ دینے کاموقع ملا۔ ہم اس میلے کے ذریعے موسیقی کے میدان میں اپنا کردار ادا کرنے کے لیے پرجوش ہیں۔

سب سے بڑا موسیقی میلہ

افتتاحی میلہ دسمبر 2019 میں منعقد کیا گیا تھا جس نے سعودی عرب کو بین الاقوامی موسیقی کے تہواروں کے نقشے پر شمولیت کا موقع دیا۔ اس میلے میں 6 تھیٹروں میں 80 فن کاروں نے اپنے فن کے جوہر دکھائے اور چار لاکھ لوگ میلے میں شرکت کرکے لطف اندوز ہوئے۔ میلے میں شریک ہونے والے مشہور فنکاروں میں ڈیوڈ گوئٹا ، ٹیسٹو ، مارٹن گیریکس ، سٹیو آوکی ، افروجیک ، جے بالن ، رک راس، کاسمکیٹ، ڈش ڈیش اور ڈان ایڈورڈز سمیت متعدد مقامی اور علاقائی ڈی جے کی طرف سے موسیقی پرفارم کی گئی۔ ہیں۔ اس سال ہونے والے موسیقی میلے میں فنکاروں، شائقین ، تھیٹروں کی تعداد ، پرفارمنس ماضی کی نسبت زیادہ ہونے کی توقع ہے۔ پہلے بیچ کے ٹکٹ 2 ستمبر سے دستیاب ہوں گے۔