.

امریکا کی سعودی عرب کے ابھا ہوائی اڈے پرحوثیوں کے حملے کی مذمت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

منگل کے روز امریکی محکمہ خارجہ نے یمن کے ایرانی حمایت یافتہ حوثیوں کی جانب سے سعودی عرب کے ابھا بین الاقوامی ہوائی اڈے کو نشانہ بنانے کی کوشش کی مذمت کی ہے۔

امریکی محکمہ خارجہ کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ سعودی عرب پر سال کے آغاز سے ہی حوثیوں کی جانب سے 240 سے زائد حملوں کا نشانہ بنایا گیا ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ حوثیوں کے حملے سعودی عوام اور مملکت میں موجود 70 ہزار سے زائد امریکیوں کو خطرے میں ڈال رہے ہیں۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ حوثیوں نے یمن میں اپنے حملوں میں اضافہ کیا ہے خاص طور پر مآرب میں حوثیوں کے حملوں کے نتیجے میں انسانی بحران بڑھ گیا ہے۔

بیان میں حوثیوں سے کہا گیا ہے کہ وہ جنگ بندی کی پاسداری کریں اور اقوام متحدہ کی سرپرستی میں مذاکرات کریں۔

سعودی عرب میں امریکی سفارت خانے نے منگل کو حوثیوں کی جانب سے ابھا ائیرپورٹ پریے گئے ’خوفناک حملے‘ کی مذمت کی ہے۔

اس نے حوثیوں سے مطالبہ کیا کہ وہ شہریوں کے خلاف اپنے حملے بند کریں اور یمن کے تنازعے کا سفارتی حل تلاش کریں۔

امریکی مشن نے ایک بیان میں مزید کہا کہ ابھا ہوائی اڈے پر حملے نے یمن میں انسانی جانوں ، بنیادی ڈھانچے اور اورامن و استحکام کے امکانات کو خطرے میں ڈال دیا۔

خیال رہے کہ گذشتہ روز یمن کے ایرانی حمایت یافتہ حوثی باغیوں نےسعودی عرب کے ابھا شہر میں موجود بین الاقوامی ہوائی اڈے پر ڈرون طیاروں سے حملہ کیا تھا۔