.

ایران کے خلاف کارروائی کا وقت آگیا ہے: اسرائیلی وزیراعظم کی دھمکی

ایران کو طاقت سے جوہری ہتھیاروں کے حصول سے روکیں گے: بینیٹ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی وزیراعظم نفتالی بینیٹ نے جُمعہ کے روز بین الاقوامی ایٹمی توانائی ایجنسی کی رپورٹ کے بعد ایران کے خلاف طاقت کے استعمال کی دھمکی دی ہے۔ ’آئی اے ای اے‘ کی اس رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ایران کے پاس ممکنہ طور پر جوہری ہتھیار ہوسکتے ہیں۔ اس رپورٹ کے سامنے آنے کے بعد تل ابیب نے تہران کے خلاف سخت عالمی رد عمل کا مطالبہ کیا ہے۔

بینیٹ نے کہا کہ اسرائیل اس رپورٹ میں بیان کردہ صورت حال کو بہت سنجیدگی سے لیتا ہے اور ایران کو جوہری ہتھیاروں کے حصول سے روکنے کے لیے اپنی طاقت سے ہر ممکن کوشش کرے گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایران دُنیا سے جھوٹ بولتا رہتا ہے اور ایٹمی ہتھیار تیار کرنے کے پروگرام کو فروغ دیتا ہے جبکہ اپنی بین الاقوامی ذمہ داریوں سے انکار کرتا ہے۔

بینیٹ نے ایٹمی ہتھیار حاصل کرنے کی ایران کی کوششوں پر فوری بین الاقوامی ردعمل کا مطالبہ کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ اُنہیں یقین ہے کہ ایک مضبوط بین الاقوامی موقف "تہران حکومت" میں تبدیلی لا سکتا ہے۔

وزیر اعظم نے وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ "آئی اے ای اے کی رپورٹ نے خبردار کیا ہے کہ کارروائی کا وقت آگیا ہے۔ اس لیے کسی کو یہ امید نہیں رکھنی چاہیے کہ ایران مذاکرات کے ذریعے اپنے راستے بدلنے پر آمادہ ہو جائے گا۔ ہم اسے طاقت کے ذریعے جوہری میدان میں شکست دیں گے۔

بینیٹ نے پچھلے مہینے امریکی صدر جو بائیڈن سے بات کی تھی۔ انہوں نے کہا تھا کہ ایران کے جوہری پروگرام میں پیش رفت کے بعد سنہ 2015ء کے جوہری معاہدے کی طرف واپسی کا کوئی فائدہ نہیں۔