.

سعودی عرب:2021 کے آخر میں غیر ملکی تجارتی حکمت عملی کا آغاز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

العربیہ ڈاٹ نیٹ کو ذرائع نے سے معلوم ہوا ہے کہ سعودی عرب اس سال کے آخر میں غیر ملکی تجارت کے لیے قومی حکمت عملی شروع کرنے کا ارادہ رکھتا ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ سعودی جنرل اتھارٹی فار فارن ٹریڈ نیشنل ٹرانسفارمیشن پروگرام کے ساتھ کام کر رہی ہے تاکہ دنیا کے متعدد ممالک اور منتخب ٹریڈ یونینوں کے ساتھ آزاد تجارتی معاہدوں پر دستخط کرنے کے مواقع کا مطالعہ کیا جا سکے۔

یہ پالیسی غیر ملکی منڈیوں تک رسائی بڑھانے کے لیے جی سی سی ممالک کے درمیان انضمام کو بھی فروغ دیتا ہے۔

برآمدی مصنوعات کی سروسز

یہ حکمت عملی جنرل اتھارٹی فار فارن ٹریڈ کو سعودی عرب کی مصنوعات اور خدمات کی برآمد کو بہتر بنانے اور سہولیات فراہم کرنے میں معاونت فراہم کرے گی۔

نیز یہ بنیادی زرعی اور صنعتی مصنوعات اور مویشیوں کی درآمد کی مدد کرے گا۔ اس سے سعودی عرب کے معاشی مفادات پورے ہونے اور آزاد تجارتی معاہدوں کے ذریعے غیر ملکی سرمایہ کاری کو راغب کرنے کا موقع ملے گا۔

یہ قابل ذکر ہے کہ غیر ملکی تجارت کے لیے جنرل اتھارٹی غیر تیل کی برآمدات اور سرمایہ کاری کے لیے ہدف والی منڈیوں تک رسائی کو فعال کرنے اور ان کو درپیش رکاوٹوں کو کم کرنے کے لیے کام کر رہی ہے۔

اس نے علاقائی اور عالمی مرکزکے طور پر سعودی عرب کی تجارتی اور سرمایہ کاری کی پوزیشن کو مستحکم کرنے کے علاوہ بین الاقوامی تنظیموں میں سعودی عرب کی تجارت اور سرمایہ کاری کے فوائد کو بڑھانے کے لیے بھی کام کیا۔