.
عراقی ملیشیا

شام سے دھماکہ خیز مواد عراق سمگل کرنے کی کوشش ناکام بنا دی گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کے سکیورٹی حکام نے بتایا ہے کہ شام سے خطرناک نوعیت کے دھماکہ خیز مواد کو عراق منتقل کرنے کی کوشش ناکام بنا دی گئی ہے۔

منگل کو عراقی سکیورٹی کے میڈیا سیل نے دھماکہ خیز مواد شام سے عراق اسمگل کرنے کی کارروائی کو ناکام بنانے کی اطلاع دی۔ سیل نے ایک بیان میں کہا کہ ’’کاؤنٹر ٹیررازم سروس‘‘کی درست انٹیلی جنس اطلاع کے مطابق فوج کے 15ویں ڈویژن نے ’ٹی این ٹی‘دھماکہ خیزمواد سے بھرے 500 کلو وزنی 18بیگ لانے کی کوشش ناکام بناتے ہوئے خطرناک دھماکہ خیز مواد قبضے میں لے لیا گیا ہے۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ دھماکہ خیز مواد کو ضبط کرنے کا عمل ایک خصوصی ورکنگ ٹیم کی تشکیل اور تھرمل کیمروں کی کی روشنی میں کیا گیا۔ کیمروں کی مدد سے ایک مشکوک گاڑی کے شام سے عراق داخل ہونے کی نشاندہی کی گئی جس کے بعد اس گاڑی کا تعاقب کیا گیا۔ یہ دھماکہ خیز مواد سرحدی گاؤں نعیم سے عراق داخل کرنے کی کوشش کی گئی تھی۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ دھماکہ خیز مواد سے بھرے تھیلے اسی جگہ پر خالی کر کے ضبط شدہ مواد سے مناسب طریقے سے ٹھکانے لگا دیا گیا۔

ایک اور سیاق عراقی سکیورٹی میڈیا سیل نے کہا ہےکہ وفاقی پولیس کے ڈوژن چارنے کارروائی کر کے داعش کے ایک مبنیہ دہشت کو قتل کردیا گیا۔ یہ کارروائی القادریہ کے مقام پر اس وقت کی گئی جب تین مسلح عسکریت پسندوں نے ایک دکان کو توڑنے کی کوشش کی جس پر پولیس نے کارروائی کی۔ جھڑپ کے دوران ایک عسکریت پسند ہلاک اور دو فرار ہو گئے۔ مفرور شدت پسندوں کی تلاش جاری ہے۔