.

ایران پر سے جلد پابندیاں اٹھانے کا موقع ہے : روس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ویانا میں بین الاقوامی تنظیموں کے لیے روس کے مستقل مندوب میخائل اولیانوف کا کہنا ہے کہ ایران پر سے جلد پابندیاں اٹھا لیے جانے کا "واقعی" امکان ہے۔

بدھ کے روز اپنی ٹویٹ میں ان کا کہنا تھا کہ اس مقصد کے لیے ہمیں جوہری معاہدے کی بحالی کے حوالے سے قرار داد کے مسودے کو مکمل کرنے کی ضرورت ہے۔ روسی مندوب کے مطابق یہ ہدف جون میں ویانا بات چیت کے چھٹے دور کے اختتام پر زیر غور تھا۔

روسی مندوب کا یہ موقف ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب امریکی جریدے Foreign Policy کی ایک رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ایران جوہری ہتھیاروں کے حصول سے ایک ماہ کی دوری پر ہے۔ جریدے نے خبردار کیا ہے کہ امریکی صدر جو بائیڈن کی انتظامیہ کا ڈھیلا پن پورے مشرق وسطی کو جوہری ہتھیاروں کی ایک نئی دوڑ میں جھونک سکتا ہے۔

فارن پالیسی کی رپورٹ کے مطابق امریکا کے سینئر ذمے داران کو اندیشہ ہے کہ ایران واقعتا "پلان B" کی طرف حرکت کر رہا ہے اور وہ ہے مذاکرات کا التوا، جب کہ دوسری جانب وہ جوہری ہتھیاروں تک پہنچنے کے لیے دھماکا خیز اقدام کے لیے تیار ہے۔

مشرق وسطی کے امور کے ماہر امریکی سفارت کار ڈینس راس کا کہنا ہے کہ "یہ بات واضح ہے کہ اب ایرانیوں کو ہمارا خوف نہیں رہا اور اس کا ایک حد تک یہ مطلب ہوا کہ ہمارے پاس واقعتا روک کا وہ معیار نہیں ہے جس کی ہمیں ضرورت ہے خواہ وہ جوہری معاملہ یا پھر خطے میں موجودگی کا معاملہ ہو۔