.

’سدایا‘ کے زیراہتمام آرٹاتھون مصنوعی ذہانت پروگرام کے لیے رجسٹریشن شروع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی ڈیٹا اینڈ آرٹیفیشل انٹیلی جنس اتھارٹی (سدایا) نے مصنوعی ذہانت کے عالمی مقابلے کے دوسرے آرٹاتھون ایڈیشن برائے سال 2021ء کےلیے رجسٹریشن کا آغاز کیا ہے۔ رجسٹریشن کا عمل 26 ستمبرسے ’سدایا‘ کی ویب سائٹ پر جاری ہے جو مصنوعی ذہانت پر عالمی سمٹ کے اہم اقدامات میں سے ایک ہے کا مقصد موسیقی، انٹرایکٹو آرٹ، ڈرائنگ اور سٹیریو آرٹ میں دلچسپی رکھنے والوں کو ڈیٹا اور مصنوعی ذہانت کے ماہرین کے ساتھ اکٹھا کرنا ہے تاکہ مقابلے، آرٹ سرگرمیوں کو زیادہ جدت فراہم کرتے ہوئے مخصوص ٹریک پر چلتے ہوئے مصنوعی ذہات کو استعمال میں لانا ہے۔

4 ٹریک آرٹاتھون

آرٹاتھون میں4 مصنوعی ذہانت پر مبنی ٹریک شامل ہیں۔ ان میں انٹرایکٹو آرٹس ٹریک، پینٹنگز ٹریک، سٹیریوسکوپک آرٹ اور میوزک ٹریک شامل ہیں۔اس کی رجسٹریشن 20 ستمبر 2021 کو شروع ہوئی اور 11 اکتوبر 2021 کو ختم ہوگی۔ جہاں شرکاء کے پیش کردہ تکنیکی خیالات پیش کیے جائیں گے۔

اس کے بعد 20 ٹیمیں 8 ہفتوں کی مدت کے لیے ایک تربیتی کورس کے لیے منتخب کی جائیں گی جو کہ 3 اکتوبر 2021 سے ریاض میں شروع ہوگا۔ اس میں کئی ورکشاپس اور تربیتی سیشن شامل ہیں جن کا مقصد مصنوعی ذہانت کو آرٹ کے لیے استعمال کرنے والوں کی رہ نمائی کرنا اور مہارتیں باہم پہنچانا ہے۔ اس دوران آرٹسٹوں کے تیار کردہ 15 بہترین فن پاروں کو بین الاقوامی آرٹیفیشل انٹیلی جنس نمائش میں پیش کیا جائے گا۔ ان میں سے تین بہترین نمونوں کے نصف ملین ریال کے برابر انعامات دیے جائیں گے۔

داخلے کے دائرے میں توسیع

سعودی پریس ایجنسی "SPA" کے مطابق سعودی اتھارٹی فار ڈیٹا اینڈ آرٹیفیشل انٹیلی جنس (سدایا) کے سربراہ ڈاکٹر عبداللہ الغامدی نے کہا کہ "آرٹاتھون کے پہلے سیشن اور جدیدیت سے حاصل ہونے والی بڑی کامیابی نے مصنوعی ذہانت کی تکنیکوں پر مبنی آرٹ ورکس پیش کیے جس نے ہمیں دوسرا ورژن تیار کرنے کا موقع دیا۔ مقابلے میں مختلف ٹریک شامل کرنے سے قبولیت کے دائرے کو وسیع کرنے اور تخلیق کاروں کو اپنی فنکارانہ صلاحیتوں کو اجاگر کرنے اور مصنوعی ذہانت کی تکنیک کا استعمال کرتے ہوئے آرٹ ورک بنانے کے قابل بنایا۔

الغامدی نے کہا کہ ’سدایا‘ کی جانب سے شروع کیے گئے اقدامات اور پروگرام ، بشمول گلوبل مصنوعی ذہانت آرٹا تھون 2021 مقابلہ سعودی ڈیٹا اور مصنوعی کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے چیئرمین شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز کی حمایت اور خصوصی توجہ سےکا نتیجہ ہے۔

آرٹیفیشل انٹیلی جنس آرٹاتھون کے پہلے ایڈیشن کو 52 ممالک کی طرف سے بہت زیادہ توجہ اور پذیرائی ملی۔300 ڈیٹا سائنس دانوں ، مصنوعی ذہانت اور فن کے ماہرین نے مصنوعی ذہانت کی تکنیکوں کا استعمال کرتے ہوئے بصری فن کے بہترین کام تخلیق کرنے میں حصہ لیا اور مصنوعی ذہانت پر عالمی سمٹ کی سرگرمیوں کے دوران ایوارڈ بھی حاصل کیے۔