.

گذشتہ الریاض تفریحی سیزن میں 6 ارب ریال کمائے: ترکی آل الشیخ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں تفریح کی جنرل اتھارٹی کے سربراہ ترکی الشیخ نے بتایا ہے کہ گذشتہ الریاض تفریحی سیزن میں 3.1 ارب کے اخراجات کے درمیان 6 بلین ریال براہ راست اور بالواسطہ آمدنی ہوئی۔

الشیخ نے ’ٹویٹر‘ پر اپنے آفیشل اکاؤنٹ پرایک ٹویٹ میں ان نمبروں پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ میں نے سیکھا ہے کہ نمبروں کی زبان سب سے اہم ہے۔ ہمارے عزائم بہت اونچے ہیں اور کم خرچ کرنا ہے۔ ہم انشا اللہ اپنے سعودی بہن بھائیوں کی طاقت سے اس ہدف سے بھی آگے جائیں گے۔

سعودی دارالحکومت الریاض 2021 کا ریاض سیزن شروع کرنے کی تیاری کر رہا ہے۔ "امیجن مور" کے سلوگن کے ساتھ یہ پروگرام 20 اکتوبر کو شروع ہوگا اور اس کے لیے 5.4 ملین مربع میٹر رقبہ مختص کیا گیا ہے۔

ریاض سیزن میں 14 تفریحی علاقے ہیں جن میں 7،500 سرگرمیاں، 3 کلومیٹر کا واک وے، 200 سے زیادہ ریستوران، کیفے اور اسٹورز، 4 تھیٹر، ایک بین الاقوامی میدان، 500 الیکٹرانک گیمز اور 9 بین الاقوامی سٹوڈیو شامل ہیں۔

گولف کورس کے علاوہ 12 پیڈل ٹینس کورٹ اور دنیا کا پہلا اور سب سے بڑا موبائل اسکائی لوپ، جس کی گنجائش 40 فیصد مزید بڑھائی گئی ہے اس تفریحی سیزن کا حصہ ہیں۔

سیزن میں شاعری کی شامیں، 5 ادوار میں لڑائیوں کے تجربات، فوجی ٹینکوں کی آمد، براہ راست گولہ بارود کے ساتھ شوٹنگ، 15 انٹرایکٹو شوٹنگ رینجز اور بہت سے معیاری اور بین الاقوامی ایونٹس شامل ہیں جو پہلی بار سعودی عرب میں منعقد ہوں گے۔