.

شام: ادلب پر بشار الاسد کی فوج کی گولہ باری سے پانچ شہریوں سمیت 8 افراد ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام میں بشار الاسد کی فوج نے حزب اختلاف کے زیر انتظام علاقے ادلب پر گولہ باری کی جس کے نتیجے میں پانچ شہریوں سمیت آٹھ افراد ہلاک ہوگئے۔

برطانیہ میں قائم شامی مبصر گروپ شامی آبزرویٹری برائے انسانی حقوق کے مطابق شامی فوج کے گولے اریحا قصبے میں گرے جس کے باعث کم از کم دو بچے ہلاک ہو گئے۔

مبصرگروپ کے مطابق گولہ باری کے وقت بچے سکول کی جانب جارہے تھے اور حملے میں کم از کم 26 افرا د کے زخمی ہونےکی اطلاعات ہیں۔

بدھ کے روز بشار الاسد کی فوج کی جانب سے ادلب پر بمباری مارچ 2020 میں روس اور ترکی کی نگرانی میں ہونے والے فائر بندی کے معاہدے کی جان لیوا ترین کارروائی ہے۔

مبصر گروپ کےمطابق ادلب شہر شام میں بشار الاسد کی حزب اختلاف کے پاس واحد کونا ہے جس میں اب تک دمشق حکومت اپنا اثر و رسوخ قائم نہیں کر سکی۔

اس گولہ باری سے قبل دمشق میں ایک فوجی بس پر بم دھماکوں سے حملے کے نتیجے میں کم از کم 13 فوجی ہلاک ہوگئے تھے۔