.

ایکسپو 2030 کی میزبانی کی سعودی درخواست کی حمایت پر شہزادہ محمد کی امارات کی ستائش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی ولی عہد اور وزیر دفاع شہزادہ محمد بن سلمان نے کل ہفتے کے روز ابوظبی کے ولی عہد اور متحدہ عرب امارات کی مسلح افواج کے نائب کمانڈر شیخ محمد بن زائد آل نہیان سے ٹیلی فون پر بات چیت کی۔

اس موقع پر بن سلمان نے EXPO 2030 کی میزبانی کے حوالے سے سعودی عرب کی درخواست کو سپورٹ کرنے پر بن زائد کا شکریہ ادا کیا اور ان کے موقف کو گراں قدر قرار دیا۔ بن سلمان نے دبئی میں جاری EXPO 2020 کی کامیابی پر بن زائد کو مبارک باد بھی پیش کی۔ سعودی سرکاری خبر رساں ایجنسی (ایس پی اے) کے مطابق سعودی ولی عہد نے امارات اور اس کے عوام کی ترقی اور خوش حالی کے لیے نیک تمناؤں کا اظہار کیا۔

بن سلمان نے گذشتہ روز دبئی کے حکمراں اور متحدہ عرب امارات کے نائب صدر شیخ محمد بن راشد آل مکتوم سے بھی ٹیلی فون پر رابطہ کیا۔ انہوں نے EXPO 2030 کی میزبانی سے متعلق درخواست کی حمایت پر شیخ محمد کا شکریہ ادا کیا۔ بن سلمان نے دبئی میں جاری EXPO 2020 کی کامیابی پر شیخ محمد کو بھرپور مبارک باد پیش کی۔

یاد رہے کہ سعودی عرب نے جمعے کے روز سرکاری طور پر نمائشوں کے بین الاقوامی بیورو BIE کو درخواست پیش کی تھی کہ وہ "ایکسپو 2030" کی میزبانی کا خواہش مند ہے۔ اس کا انعقاد یکم اکتوبر 2030ء سے یکم اپریل2031ء کے درمیان ہو گا۔

یہ بات سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کی جانب سے بین الاقوامی بیورو آف ایگزیبیشنز کے سیکرٹری جنرل دیمتری کرکینٹیز کو لکھے گئے خط میں سامنے آئی۔

محمد بن سلمان نے اپنے مکتوب میں کہا کہ ایکسپو 2030 کی میزبانی کے لیے ریاض کی نامزدگی سعودی عرب کے لیے ایک اہم قدم اور علامتی چیلنج ہے۔ انہوں نے کہا کہ مملکت، ورلڈ ایکسپو کے تاریخی ایونٹ کے انعقاد اور اس کی پوری قابلیت کے ساتھ کامیابی کی پوری صلاحیت رکھتی ہے۔

ولی عہد کا کہنا تھا کہ سعودی عرب جدت کے ساتھ اس عالمی فورم کے انعقاد کی تاریخ میں ایک بے مثال عالمی تجربہ فراہم کرنے کے لیے پرعزم ہے۔

شہزادہ محمد بن سلمان نے کہا کہ ہم سمجھتے ہیں کہ پہلی بارالریاض کی میزبانی میں عالمی نمائش (ورلڈ ایکسپو) کے انعقاد کا موقع دینا بین الثقافتی افہام و تفہیم اور انسانی تبادلے کے پلیٹ فارم کے طور پر BIEکے باوقار کردار میں اضافہ اور ہماری ترقی پذیر دنیا کی بدلتی ہوئی نوعیت کی عکاسی کرے گا۔