.

شام میں حزب اللہ اور ایرانی ملیشیاؤں کے اسلحہ گوداموں پر اسرائیلی بمباری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شامی حکومت کے ذرائع ابلاغ نے اطلاع دی ہے کہ اسرائیل نے ہفتے کے روز دمشق کے دیہی علاقوں میں متعدد مقامات پر میزائل حملے کیے ہیں۔ ان حملوں میں دو شامی فوجی زخمی ہوئے جب کہ املاک کو بھی نقصان پہنچا ہے۔

اے ایف پی کے مطابق بم دھماکے کی گونج پورے دارالحکومت میں سنائی دی۔

شامی حکومت سے وابستہ ایک فوجی ذریعے نے بتایا کہ اسرائیل نے شمالی سرحد کی طرف سے زمین سے زمین پر مار کرنے والے میزائل داغے۔ ان حملوں میں دمشق کے دیہی علاقوں میں کچھ مقامات کو نشانہ بنایا گیا۔ انہوں نے واضح کیا کہ فضائی دفاعی نظام کے دفاعی دستوں نے میزائلوں کا بھرپور جواب دیا اور ان میں سے کچھ کو مار گرایا۔

اسلحہ اور گولہ بارود کے ڈپو

خبر رساں ایجنسی ’ایف پی اے‘ کے مطابق دمشق میں تھوڑے وقفے سے یکے بعد دیگرے دھماکوں کی آوازیں سنی گئیں۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اسرائیل عموما رات کے اوقات میں شام میں بمباری کرتا ہے مگر یہ حملہ دن کے وقت کیا گیا۔

سیریئن آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس کے مطابق اسرائیلی بمباری میں قدسیا اور دیماس کے مقامات پر لبنانی حزب اللہ اور ایران سے وابستہ ملیشیاؤں کے اسلحہ اور گولہ بارود کے ڈپو تباہ ہو گئے۔اس بمباری میں ایرانی ملیشیاؤں کے پانچ جنگجوؤں کی ہلاکت کی بھی اطلاع ہے۔

قابل ذکر ہے کہ 14 اکتوبر کو شامی حکومت کے وفادار 9 جنگجو وسطی صوبے حمص میں تدمر کے علاقے میں اسرائیلی بمباری کے نتیجے میں مارے گئے تھے۔ایران کے وفادار دو غیر شامی جنگجوؤں کی ہلاکت کے ایک ہفتے بعد اسرائیلی حملے ’تیفور‘ ہوائی اڈے اور اس کے اطراف کو بھی نشانہ بنایا گیا۔