.

سعودی عرب میں جزیرہ ’جبل کدمبل‘ سیاحوں کی گم شدہ جنت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں عسیر خطے کے ساحل پر واقع جبل کدمبل جزیرہ اپنے اردگرد سمندری حیات کے تنوع کی وجہ سے سیاحوں اور ماہی گیروں کے لیے روز مرہ کی منزل ہے۔ یہ ایک ایسا جزیرہ ہے جو سیاحوں کی جنت کہلاتا ہے۔

تین مربع کلومیٹر جزیرے کے وسط میں واقع یہ شاندار پہاڑ چٹانوں کی شکلوں اور وسیع و عریض درختوں سے گھرا ہوا ہے۔

فوٹوگرافر فائع المعی نے عسیر کے علاقے میں خوبصورت مقامات کی تصاویر کے البم تیار کیے ہیں۔

’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘ کو دیے گئے ایک انٹرویو میں المعی نے کہا کہ عسیر ایک خوبصورت فطرت کا حامل ہے۔ اس لیے فوٹوگرافر اس میں اپنا مطلوبہ ہدف تلاش کرتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ کدمبل جزیرے کے مناظر فلیمنگو جیسے ہجرت کرنے والے پرندوں کی موجودگی کی وجہ سے ناقابل بیان ہیں۔ اس پہاڑی جزیرے کے اطراف میں سمندری پانی کی لہریں اسے اپنے آغوش میں لیے ہوئے ہیں۔

مقامی فوٹو گرافر نے کہا کہ جزیرہ کدمبل عسیر کے ساحل پر واقع ہے۔ یہ سب سے خوبصورت اور قدیم قدرتی جزیروں میں سے ایک ہے، جو کہ سیاحت کے لیے ایک امید افزا مستقبل کا منتظر ہے۔

خصوصی جغرافیائی محل وقوع

انہوں نے وضاحت کی کہ یہ جزیرہ بحیرہ احمر میں اپنے ممتاز مقام کی بنا پر قرن افریقہ اور یمن سے شمال کی طرف قدیم عبوری راستے پر واقع ہے۔ اس کے برعکس اس پر قدیم اسلامی یادگاریں پائی گئیں اور یہ قومی نوادرات کے مقامات میں درج ہے۔

قابل ذکر ہے کہ جزیرہ کدمبل سمندر کے بیچوں بیچ ایک بلند آتش فشاں پہاڑ ہے جس کے ایک طرف ریت ہے۔ پہاڑ پر چڑھنے کا ایک زینہ ہے۔

پہاڑ کے اطراف میں چٹانوں کی باقیات ہیں جو کٹاؤ کی وجہ سے مٹ گئی ہیں اور ایک خوبصورت چٹان کی شکل اختیار کر گئی ہے۔