.

سعودی عرب میں کافی کے پہلے’زرعی شہر‘ کے لیے سرمایہ کاری کا معاہدہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی وزارت ماحولیات، پانی اور زراعت نے 15 سال کی مدت کے لیے مملکت میں پہلے کافی شہر میں سرمایہ کاری کے لیے مملکت کے جنوب میں واقع الباحہ میں بالجراشی زرعی کوآپریٹو سوسائٹی کے ساتھ ایک معاہدے پر دستخط کیے ہیں۔

وزارت زراعت نے بُدھ کو ایک بیان میں وضاحت کی کہ اس اقدام کا مقصد زرعی مصنوعات اور فصلوں میں خود کفالت کا درجہ حاصل کرنا، زرعی سرمایہ کاری کی تحریک کی حوصلہ افزائی کرنا، پھل دار پودوں کی شجر کاری کو فروغ دینا ،علاقے کے لوگوں کے لیے روزگار کے مواقع پیدا کرنا اور سعودی عرب میں معاشرے کے درمیان تعاون پر مبنی کردار کو فروغ دینا ہے۔

وزارت ماحولیات پانی اور زراعت نے بتایا کہ اس منصوبے میں اعلی پیداواری صلاحیت کے حامل تین لاکھ 300,000 عربی کافی اور انار کے درخت لگائے جائیں گے۔

وزارت نے مزید کہا کہ پراجیکٹ کے لیے الباحہ علاقے سے منسلک القراء گورنری کے معشوقہ گاؤں میں جگہ مختص کی گئی ہے جس کے لیے 1,662,373 مربع میٹر رقبہ تیار کیا جا رہا ہے۔ اس منصوبے میں ماڈل زرعی فارم، کافی کے پودوں کی کاشت کے لیے جدید مربوط نرسری کا قیام، پروجیکٹ پر کام کام کرنے والے افراد اور انتظامیہ کے لیے رہائشی کواٹرز کا قیام، عملے کی تربیت کا انتظام، انتظامی دفاتر، حفاظتی دیوار اور ایک مسجد کا قیام بھی شامل ہے۔

قابل ذکر ہے کہ وزارت ماحولیات، پانی اور زراعت عربی کا کافی کی پیداوار، تیاری اور مارکیٹنگ کو فروغ دینے کے لیے کام کر رہی ہے۔ جازان، الباحہ اور عسیر کے علاقے مملکت میں کافی کے لیے سب سے اہم اور سب سے زیادہ زرخیز علاقوں میں سے ہیں۔