.

سعودی عرب : انسداد بدعنوانی کمیشن "نزاہہ" کے تحت متعدد فوجداری کیسوں کا اندراج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں انسداد بدعنوانی کے قومی کمیشن (نزاہہ) کے ذمے دار ذرائع نے بتایا ہے کہ کمیشن نے گذشتہ عرصے کے دوران میں متعدد فوجداری کیسوں کی تحقیقات کیں۔اس حوالے سے نظام کے تحت ضابطے کی کارروائی پوری کی جا رہی ہے تا کہ ان افراد کو عدالت میں پیش کیا جا سکے۔

ذرائع نے اس حوالے سے 15 کیسوں کی تفصیلات جاری کیں۔ ان تفصیلات کے مطابق مذکورہ کیسوں میں ملوث ہونے پر جن افراد کو حراست میں لیا گیا ان میں متعدد سعودی شہری، کنٹریکٹنگ کمپنی کا پروجیکٹ ڈائریکٹر، 3 بینک ملازمین، ایک نوٹری پبلک، غیر ملکی مقیمین، سرکاری سروے اہل کار، بلدیہ کے ملازمین، کاروباری شخصیات اور مختلف اداروں سے تعلق رکھنے والے سرکاری ملازمین شامل ہیں۔

ان افراد پر رشوت ستانی، عہدے کے نا جائز استعمال، اختیارات کا غلط استعمال اور جعل سازی میں ملوث ہونے کے الزامات ہیں۔

نزاہہ کمیشن کے ذرائع کے مطابق مذکورہ 15 کیسوں میں کروڑوں ریال کی بدعنوانی شامل ہے۔

کمیشن نے باور کرایا ہے کہ وہ سرکاری مال ہتھیانے والوں ، ذاتی مفاد کے لیے ملازمت کو استعمال کرنے والوں اور مالی اور انتظامی بدعنوانی میں ملوث ہر شخص کے خلاف قانون و ضابطے کی کارروائی جاری رکھے گا۔