.

سعودی وزیر تعلیم اور بچی کے درمیان مُکالمے سوشل میڈیا پر زیر بحث

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بچوں کے عالمی دن کے موقع پر سعودی عرب کے وزیر تعلیم حمد آل الشیخ اور ایک تقریب کی میزبان لمیٰ الغانم کے درمیان مکالمے کے سوشل میڈیا پر چرچے ہیں۔

تقریب کی پریزنٹیشن کے دوران لڑکی کے بعد اسٹیج پر وزیر نے صورتحال کو سنبھالا ۔ انہوں نے لمیٰ کی گرم جوش تالیوں سے تعریف کی۔انہوں نے کہا کہ "ان شاء اللہ تم پروگرام پیش کرنے میں اسٹار بنو گی۔"

سوشل میڈیا پر ردعمل

سعودی عرب کے وزیر تعلیم اور لمیٰ الغانم کے درمیان ہونے والی گفتگو پر شوشل میڈٰیا پر بھرپور رد عمل سامنے آیا ہے۔ سوشل میڈیا پر کارکنوں نے وزیر تعلیم کے بچوں کے حوالے سے’پدرانہ شفقت‘ سے بھرپور جذبے کو سراہا۔

وزیر تعلیم ڈاکٹر حمد آل الشیخ نے مملکت کی طرف سے بچے کی مکمل دیکھ بھال کرنے، انہیں ان کے حقوق کے حوالے سے با اختیار بنانے، مملکت کے وژن 2030 کے مطابق ان کی صلاحیتوں اور مہارتوں کو بڑھانے کے لیے کی جانے والی عظیم کوششوں پر زور دیا۔

سعودی وزیرتعلیم ڈاکٹر حمد آل الشیخ
سعودی وزیرتعلیم ڈاکٹر حمد آل الشیخ

وزارت تعلیم کی جانب سے بچوں کے عالمی دن کے موقع پر منعقدہ تقریب سے خطاب کے موقع پر اپنے خطاب میں انہوں نے کہا کہ مملکت میں بچپن کے پروگراموں پر دی جانے والی توجہ، سرپرست کی لامحدود حمایت،خادم الحرمین الشریفین اور ولی عہد کی بچوں کو مختلف قسم کے بدسلوکی، امتیازی سلوک اور استحصال سے بچانے کے لیے ضروری ضوابط اور قانون سازی، انہیں تعلیم کے موروثی حق کی فراہمی اور اکیسویں صدی کی مہارتوں کے ساتھ ان کی صلاحیتوں کو بڑھانا، نیز ایک محفوظ اور مثبت ماحول فراہم کرنا ایک نفسیاتی اور جسمانی حفاظت کو یقینی بنانے پر زور دیا۔