یمن اور حوثی

ایران نے حوثیوں کو ہتھیار اور تربیت فراہم کی : امریکی ایلچی برائے یمن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

یمن کے وزیر خارجہ احمد عوض بن مبارک کے مطابق حوثیوں نے فائر بندی کے سمجھوتوں کی خلاف ورزیوں کا سلسلہ جاری رکھا۔ ان کا کہنا ہے کہ حوثیوں کا منصوبہ فرقہ واریت اور نسل پرستی پر مبنی ہے۔

بن مبارک نے یہ بات ایک کانفرنس کے دوران میں "یمن کا مستقبل" کے عنوان سے منعقد اجلاس میں کہی۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ایران حوثی ملیشیا کو اپنے مفادات کے لیے استعمال کر رہا ہے۔

دوسری جانب یمن میں امریکی ایلچی ٹم لینڈرکنگ کا کہنا ہے کہ "ایران نے حوثیوں کو ہتھیار اور تربیت فراہم کی ... اس بحران میں ایران کا کردار غیر مثبت ہے"۔

لینڈرکنگ نے واضح کیا کہ "یہ بحران صرف علاقائی نہیں بلکہ یہ عالمی جہاز رانی کے لیے سنگین خطرہ ہے"۔ انہوں نے باور کرایا کہ امریکا ،،، یمن میں تنازع کے حل کا پابند ہے۔

یمنی وزیر خارجہ بن مبارک نے گذشتہ ہفتے ایک بیان میں جنگ کے خاتمے اور سیاسی عمل کے دوبارہ آغاز کے لیے اقوام متحدہ کی کوششوں کی ایک بار پھر حمایت کی تھی۔

یمنی وزیر نے ٹیلی فون پر یمن کے لیے اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی ہینس گرونڈبرگ کے ساتھ یمن کی تازہ ترین صورت حال اور مارب میں جاری حوثیوں کی جارحیت کے حوالے سے بات چیت کی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں