ہیملٹن نے سعودی گراں پری جیت لی،حتمی فیصلے کا انتظار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

جدہ میں اتوار کو سعودی گراں پری جیتنے کے بعد برطانوی ڈرائیور لیوس ہیملٹن نے فارمولا ون ورلڈ چیمپیئن شپ ٹائٹل فائنل ریس تک ملتوی کر دی ہے۔ اتوار کے روز حادثات اور جوش و خروش سے بھرپور ریس میں حریف میکس ورسٹاپن کی طرف سے الزامات کے بعد جیت کے حتمی فیصلے کا انتظار کیا جا رہا ہے۔

دونوں ڈرائیورز اکیسویں راؤنڈ میں داخل ہوئے اور سعودی ریس جو کہ پہلی بار عالمی چیمپئن شپ کیلنڈر میں شامل کی گئی ہے ورسٹاپن برتری پر رہے مگر وہ ہیملٹن سے آٹھ پوائنٹ پیچھے ہیں۔ وہ لگاتار پانچواں ٹائٹل جیتنے کے خواہشمند ہیں اور اس نے جرمن لیجنڈ مائیکل شوماکر ساتھ ساتھ ٹائٹلز کی تعداد کا ریکارڈ اپنے نام کیا۔

لیکن برطانوی ڈرائیور نے کامیابی اپنے نام کرلی ایک دلچسپ دوڑ کے بعد جس میں سرخ جھنڈا دو بار بلند کیا گیا تھا اور ایک سے زیادہ بار حفاظتی کار کو چالو کیا گیا تھا۔ وہ جدہ سے باہر نکلے اور ایک پوائنٹ حاصل کرنے کے بعد ہالینڈ کے باشندے سے 369.5 پوائنٹس کے فاصلے پر ہے۔

ورسٹاپن کو ٹائٹل جیتنے کے لیے ہیملٹن کے ساتھ فرق کو 8 پوائنٹس سے بڑھا کر 26 کرنا پڑا اور ڈرائیورز کے ٹائٹل پر مرسڈیز کی اجارہ داری کو توڑنا پڑا جو جرمن مینوفیکچرر نے پچھلے سات سیزن میں جیتا تھا۔

چوبیس سالہ ورسٹاپن عالمی ٹائٹل جیت سکتے تھے اگر وہ سعودی عرب میں تیز ترین لیپ کے لیے ایک پوائنٹ کے ساتھ جیتتے اور ہیملٹن ٹاپ فائیو سے باہر تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں