سعودی عرب کے ساتھ سرحدی گزر گاہ پر عُمانی شہری نے سرکاری اہل کاروں کو کیا پیش کیا ؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب اور عمان کو جوڑنے والی ہائی وے کے افتتاح پر ایک عُمانی شہری نے خاص انداز سے اپنی خوشی کا اظہار کیا۔ مذکورہ شہری نے سعودی عرب کے ساتھ سرحدی گزر گاہ پر موجود ملازمین کے درمیان عُمانی مٹھائیاں تقسیم کیں۔

سعودی عرب اور عُمان کے بیچ یہ الربع الخالی ہائی وے 564 کلو میٹر طویل ہے۔ اس سڑک کی تعمیر پر 1.97757 ارب سعودی ریال کی لاگت آئی۔

دونوں ملکوں کو جوڑنے والا یہ منصوبہ انجینئرنگ کا ایک عجوبہ ہے۔ منصوبے کو ٹرانسپورٹ اور لوجسٹک خدمات کی وزارت نے مکمل کیا۔ یہ منصوبہ سعودی عرب اور عمان کے بیچ تجارتی تبادلے کا حجم بڑھانے اور حجاج کرام اور سیاحوں کی آمد و رفت آسان بنانے میں اہم کردار ادا کرے گا۔

الربع الخالی ہائی وے پر سرحدی گزر گاہ کی گنجائش یومیہ 1700 گاڑیوں تک ہو گی جب کہ کارگو سیکشن کی گنجائش یومیہ 966 ٹرکوں تک ہو گی۔

اس اہم منصوبے کا افتتاح سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کے سلطنتِ عُمان کے دورے کے موقع پر کیا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں