ایران: پارسیان میں ایک گیس ریفائنری میں دھماکا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایران میں پراسرار آگ اور دھماکوں کا سلسلہ تاحال جاری ہے۔ جمعرات کو ایران کے سرکاری ٹیلی ویژن نے ملک کے جنوب میں ایک ریفائنری میں گیس کنڈینسیٹ لائن میں دھماکے کا اعلان کیا ہے۔

ٹی وی چینل کی رپورٹ کے مطابق پارسیان ریفائنری میں 10 انچ قطر کی گیس کنڈینسنگ پائپ لائن ایک کھدائی کرنے والے والے آلے سے ٹکرانے کی وجہ سے پھٹ گئی تھی۔

رپورٹ میں ریفائنری کے جنرل منیجر کے حوالے سے مزید کہا گیا ہے کہ حادثے میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔ان کا کہنا ہے کہ ریسکیو اور آپریشن ٹیمیں اس جگہ پہنچ گئیں جہاں ٹرانسمیشن لائن میں خلل پڑا تھا۔

یہ واقعہ گذشتہ پیر کو ایرانی دارالحکومت تہران کے جنوب میں ایک گیس پائپ لائن میں دھماکے دو دن بعد پیش آیا ہے۔

"ایران انٹرنیشنل" چینل کی رپورٹ کے مطابق ایرانی حکام نے کسی دھماکے کی موجودگی کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ آگ لگنے کی وجہ "ڈرلنگ کے دوران گیس کی لیکج تھی" تھی۔

خیال رہے کہ ایران میں اہم اور حساس نوعیت کی تنصیبات میں ہونےوالے پراسرار دھماکوں اور آتش زدگی کے واقعات معمول بن چکے ہیں۔

گذشتہ اپریل میں وسطی صوبے اصفہان میں دھماکہ خیز مواد اور آتش بازی کی ایک فیکٹری میں آگ لگ گئی تھی جس میں 9 مزدور زخمی ہوئے تھے۔ اس آتش زدگی کی وجوہات کا تعین نہیں ہو سکا تھا۔

8 مئی کو ملک کے جنوب میں بوشہر شہر کے داخلی دروازے پر ایک بڑی آگ بھڑک اٹھی جس میں بوشہر جوہری پلانٹ بھی شامل ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں