یمن اور حوثی

عرب اتحاد کے الجوف اور مآرب میں حوثیوں کے ٹھکانوں پر31 حملے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

کل جمعہ کو یمن میں آئینی حکومت کی حمایت کرنے والے اتحاد نے اعلان کیا کہ اس نے مآرب اور الجوف گورنریوں میں حوثی ملیشیا کے خلاف 24 گھنٹوں کے اندر 31 اہدافی کارروائیاں کی ہیں۔

اتحاد نے کہا کہ ہدف بنا کرنشانہ بنائے گئے اہداف میں 18 گاڑیاں تباہ ہوئیں اور حوثی ملیشیا کے 180 دہشت گرد عناصر کی ہلاکتوں کی تصدیق کی گئی ہے۔

بیان میں مزید کہا کہ انہوں نے ساحلی فورسز کی مدد اور شہریوں کے تحفظ کے لیے مغربی ساحل پر 5 ٹارگٹنگ آپریشن کیے ہیں۔

جانی نقصان

انہوں نے کہا کہ ویسٹ کوسٹ آپریشنز میں فوجی گاڑیوں کو نشانہ بنایا گیا اور 25 سے زائد دہشت گرد عناصر کوہلاک کیا گیا۔

عرب اتحاد نے واضح کیا کہ مغربی ساحل پر یمنی افواج کی کارروائیاں سٹاک ہوم معاہدے کی شقوں سے باہر ہوئیں۔

یہ ایک ایسے وقت میں ہوا ہے جب مآرب گورنری مسلسل لڑائیوں کا سامنا کر رہی ہے، جس میں حوثی ملیشیا کی صفوں میں نقصان ہو رہا ہے۔

العربیہ/الحدیث ذرائع نے کل اطلاع دی تھی کہ لبنانی حزب اللہ سے وابستہ ایک عسکری ماہر مآرب کے جنوب میں ام ریش محاذ پر مارا گیا۔

فوجی ذرائع نے بھی اس بات کی تصدیق کی ہے کہ حملہ ناکام بنا دیا گیا ہے اور حوثیوں کو بھاری جانی نقصان پہنچا ہے۔

قابل ذکر ہے کہ ایرانی حمایت یافتہ ملیشیا کو گذشتہ چند دنوں کے دوران شدید دھچکا پہنچا ہے۔ اسے یمن کی سرکاری فوج اور اتحادی افواج کی طرف سے بھاری نقصان اٹھانا پڑا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں