جوہری ایران

ایران سے نمٹنے کے لیے متبادل راستوں کی تلاش میں سنجیدہ ہیں : بلینکن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکی وزیر خارجہ اینٹنی بلینکن کا کہنا ہے کہ جہاں تک جوہری بات چیت کی طرف واپسی کا تعلق ہے تو اس حوالے سے ان کے ملک نے ایران کے ساتھ نمٹنے میں سفارت کاری کا راستہ اپنا رکھا ہے۔ اس لیے کہ یہ دستیاب راستوں میں سب سے بہتر ہے۔

آج منگل کے روز انڈونیشیا میں ایک پریس کانفرنس میں بلینکن کا کہنا تھا کہ واشنگٹن اپنے حلیفوں اور شراکت داروں کے ساتھ متبادل اختیارات پر بھی کام کر رہا ہے۔

اس سے قبل ایران نے جوہری معاہدے پر دستخط کرنے والے مغربی ممالک پر الزام عائد کیا تھا کہ وہ مسلسل ملامت کا نشانہ بنانے کا کھیل ،،، کھیل رہے ہیں۔ یہ الزام یورپی سفارت کاروں کے اس بیان کے ایک روز بعد سامنے آیا جس میں کہا گیا تھا کہ پیش رفت نہ ہوئی تو جوہری معاہدہ عنقریب "بے سود" یا "بے قیمت" ہو جائے گا۔

علی باقری
علی باقری

یاد رہے کہ امریکی وزیر خارجہ نے گذشتہ ہفتے برطانیہ میں گروپ سیون کے اجلاس سے قبل بھی باور کرایا تھا کہ انہوں نے یورپی ممالک کے ساتھ ایرانی جوہری معاہدے پر بحث کی ہے۔ علاوہ ازیں اُن اقدامات پر بھی گفتگو ہوئی ہے جو مذاکرات کی کشتی ڈگمگانے کی صورت میں آئندہ مرحلے میں لازم ہوں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں