ویانا میں ایران کا سخت گیر موقف باعثِ تشویش ہے: سعودی وزیر خارجہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نے باور کرایا ہے کہ ویانا مذاکرات میں اس وقت کوئی امید نظر نہیں آ رہی ہے۔ انہوں نے یہ بات منگل کے روز ریاض میں خلیج تعاون کونسل کے 42 ویں سربراہ اجلاس کے اختتام کے بعد ہونے والی پریس کانفرنس کے ضمن میں کہی۔

سعودی وزیر خارجہ کے مطابق ایران کا سخت گیر موقف دکھائی دے رہا ہے اور تہران سابقہ ادوار میں طے پانے والے امور سے پیچھے ہٹ گیا ہے۔

بن فرحان کا کہنا تھا کہ "ہم ایران کے ساتھ ایک طویل اور جامع جوہری معاہدہ چاہتے ہیں۔ ہم مذاکرات کی کامیابی کے آرزو مند ہیں"۔

انہوں نے باور کرایا کہ ویانا مذاکرات میں ایران کا "سخت گیر" موقف تشویش کا باعث ہے۔

سعودی وزیر خارجہ کے مطابق خلیج تعاون کونسل کے ممالک ویانا میں ایرانی جوہری بات چیت کا جائز لے رہے ہیں ،،، اور یہ ممالک اپنے موقف کا اظہار کر چکے ہیں کہ وہ ان مذاکرات میں شریک ہوں۔

شہزادہ فیصل بن فرحان نے واضح کیا کہ "ابھی تک کی خبریں یہ بتا رہی ہیں کہ ایرانی جوہری بات چیت میں کچھ ٹال مٹول کی جا رہی ہے"۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں