ایران کے پاس جوہری ہتھیار نہیں ہوناچاہیے:سعودی عرب ، مصر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کے وزیرخارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان اور ان کے مصری ہم منصب سامع شکری نے کہا ہے کہ ایران کے پاس جوہری ہتھیار نہیں ہونا چاہیے۔

دونوں وزرائے خارجہ نے جمعرات کو قاہرہ میں ملاقات کے بعد ایک مشترکہ پریس کانفرنس میں جوہری ہتھیار کے بغیرایران کی اہمیت پر زوردیا ہے۔شہزادہ فیصل نے کہا کہ مملکت کے مصرکے ساتھ مضبوط اور ٹھوس دوطرفہ تعلقات استوار ہیں۔

سامع شکری نے بھی اسی قسم کے جذبات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ’’سعودی عرب کے ساتھ ہمارے خصوصی اور تزویراتی تعلقات استوارہیں‘‘۔

انھوں نے مزید کہا کہ ہم خطے میں سلامتی اوراستحکام کے حصول کے لیے سعودی عرب کے ساتھ مل کر کام کر رہے ہیں۔

سعودی وزیرخارجہ نے ایران کے ساتھ اردن میں مملکت کے’سیکورٹی مذاکرات‘سے متعلق میڈیا کی حالیہ اطلاعات کو مسترد کردیا اور انھیں بے بنیاد قرار دیتے ہوئے کہا کہ ایسی کوئی بات چیت نہیں ہوئی ہے۔

دونوں وزراء خارجہ نے لیبیا سے غیرملکی افواج اور کرائے کے فوجیوں کے انخلا کی ضرورت پر بھی زوردیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں