سعودی عرب: بوسٹر خوراک کی مدت کم کرکے 3 ماہ کردی گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

کل سوموار کو سعودی عرب کی وزارت صحت نے کرونا وبا کی روک تھام کے لیے دوسری خوراک کے ساتھ بوسٹر خوراک دینے کی مدت کم کر کے 3 ماہ کرنے کا اعلان کیا ہے۔

وزارت صحت نے "ٹویٹر" اور اس کے آگاہی پلیٹ فارم "Live with Health" پر اپنے اکاؤنٹ کے ذریعے کئی انفوگرافک ڈیزائن شائع کیے ہیں جو حفاظتی ٹیکوں کی تکمیل کی سطح کو بڑھانے کے لیے بوسٹر خوراک کی اہمیت پر زور دیتے ہیں۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ کرونا کی تبدیل ہوتی اشکال کے ہوتے ہوئے ایک خوراک کافی نہیں۔ ویکسین کی دوسری خوراک قوت مدافعت کی سطح کو بڑھا دیتی ہے جو وائرس خاص طور پرتبدیل ہوتی شکلوں سے بچانے کے لیے مزاحم اور کافی ہے۔

گزشتہ روز سعودی محکمہ صحت نے کرونا ویکسین کی بوسٹر خوراک لینے اور کمیونٹی کی قوت مدافعت تک پہنچنے پر زور دینے کے لیے "کیپ یور لیول ود بوسٹر ڈوز" مہم کا آغاز کیا۔

کرونا سے بچاؤ

یہ قدم ابھرتے ہوئے (کرونا) وائرس کے خلاف آگاہی مہم کے تسلسل کے طور پر اٹھایا گیا ہے، جسے وزارت صحت نے وائرس کے پھیلاؤ کے آغاز سے ہی (کرونا کی روک تھام) کے عنوان سے شروع کیا تھا۔ اس کا مقصد معاشرے کے تمام افراد کو آگاہ کرنا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں