سعودی عرب میں کیفے کی تعداد میں اضافے کی وجہ کیا ہے؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

فیڈریشن آف سعودی چیمبرز میں نیشنل کمیٹی برائے انٹرپرینیورشپ کے سربراہ اور ریاض چیمبر میں انٹرپرینیورشپ کمیٹی کے چیئرمین ریاض الزامل نے سعودی عرب میں کاروباری افراد کی’کافی شاپس‘ کی سرگرمیوں میں سرمایہ کاری کے رجحان میں اضافے کا راز بتایا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ جامع مطالعہ پر مبنی کوئی بھی سرمایہ کاری مارکیٹ کو مزید تقویت بخشے گی اور اس پر مثبت منافع ہوگا۔ ہم یہ بھی نہیں بھولیں گے کہ ریاض شہر مختلف شعبوں میں ایک عظیم ترقی کے مرحلےسے گذر رہا ہے۔ جو ہر ایک کے لیے سرمایہ کاری کے مواقع مہیا کررہا ہے،چاہے کیفے میں ہوں یا دیگر شعبے ہوں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے ساتھ ایک خصوصی انٹرویو میں الزامل نے مزید کہا کہ زیادہ تر سرمایہ کاری ان لوگوں کے لیے ایک کافی شاپ جیسی کشش رکھتی ہے جو مارکیٹ میں داخل ہونا چاہتے ہیں لیکن کیفے زیادہ منافع کے مارجن کی وجہ سے منفرد مقام رکھتےہیں۔ اس شعبے میں سرمایہ کاری کی راہ میں زیادہ رکاوٹ بھی نہیں۔ مارکیٹ کے ساتھ ساتھ فوری مالیاتی بہاؤ اور اس وجہ سے اس سرگرمی کی طلب میں اضافہ ہوسکتا ہے۔

سعودی عرب میں کافی خانوں میں سرمایہ کاری کا مستقبل

انہوں نے کہا کہ عام طور پر، کوئی بھی سرمایہ کاری خطرات کے بغیر نہیں ہوتی ہے اوراس وقت تک سرمایہ نہیں لگایا جاتا ہے جب تک ایک مکمل فزیبلٹی اسٹڈی مکمل نہ ہو جائے اور اس سے پہلے تمام مالیاتی اور دیگر پہلوؤں سے معلوم نہ ہو جائے۔ اس کے علاوہ ایک پرکشش نئے آئیڈیا اور ایک مناسب کاروباری ماڈل کو وضع کیا جائے۔ جو اس سرمایہ کاری کی کامیابی میں حصہ ڈالے گا۔

انہوں نے کہاکہ گذشتہ پانچ سالوں کے دوران صارفین کے رویے میں تبدیلی آئی ہے۔ کام، مطالعہ اور مختلف ملاقاتوں کے مقصد کے لیے کافی شاپ میں اکثر آنے کی عادت کافی شاپ کے منصوبوں کو اپنانے کے لیے ایک اہم وجہ بن گئی ہے جس نے بہت سے لوگوں کو اپنی طرف متوجہ کیا۔ یہ کشش کافی روسٹر سیکٹر اور کیفے میں سرمایہ کاری کی بلند شرح سے ظاہر ہوتی ہے جو گذشتہ مدت کے دوران 40 فیصد سے زیادہ ہو گئی تھی۔

کیفے کی تعداد میں اضافہ

سعودی عرب میں کیفے کی تعداد میں اضافے کے حوالے سے پوچھے گئے سوال کے جواب میں انہوں نے وضاحت کی کہ ’ہم اب بھی آبادی کی تعداد کے مقابلے کافی شاپس کی تعداد کے لحاظ سے عالمی اوسط سے کم ہیں۔ یہ اس شعبے کے لیے مثبت بات ہے، لیکن منفی بات یہ ہے کہ کچھ نوجوان سائٹ کا مکمل مطالعہ کیے بغیر اپنے پروجیکٹ شروع کرتے ہیں۔ لاگت، پوزیشننگ اور ضرورت سے زیادہ نقالی پر انحصار اور بغیر پیشگی تجربے کے مارکیٹ میں داخل ہونے میں جلدی کرتے ہیں۔

خواہ یہ منفی ہو یا مثبت الزامل نے نشاندہی کی کہ بازار اور معاشرے کی خدمت کرتے ہیں ان کی بقا زیادہ تر شاپنگ مالز کے مالکان یا سٹرپ مال اور دیگر کی خواہش ہے کہ دکانیں متنوع ہوں اور مختلف خدمات فراہم کریں۔ تاکہ سائٹ ایک سرگرمی کے لیے نہ ہو۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں