سعودی عرب: 14 بار قلا بازیاں کھانے والی کار کے ڈرائیور کے تاثرات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ریت کے ٹیلوں پر الٹنے والی ہائی لکس گاڑی کا ڈرائیور اس حادثے سے بحفاظت باہر نکلنے میں کامیاب رہا۔ یہ ایک معجزہ ہے۔ اس حیران کن واقعے کی ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی جس میں سعودی نوجوان کی گاڑی کو ایک صحرا میں قلا بازیاں کھاتےدیکھا جا سکتا ہے۔ اس حادثے میں سعودی نوجوان گاڑی کے اندر موجود تھا اور اسے معمولی چوٹیں بھی آئیں۔

گاڑی کے ڈرائیور "المفحط" مہدی السنر نے العربیہ ڈاٹ نیٹ کو بتایا کہ یہ کلپ ہائی لکس کار کا ایک تجربہ تھا جسے میں امارات میں ہونے والے لیوا مقابلے میں حصہ لینے کی تیاری کے لیے استعمال کر رہا تھا۔ مجھے اس کھیل سے محبت ہے۔ میں چھ سال سے اس کی مشق کر رہا ہوں۔ میں سعودی نوجوانوں کے ایک خاص گروپ کے ساتھ مکینکس کے شعبے میں مہارت رکھتا ہوں، اور ہم کاروں کی سپلائی اور مرمت کا عمل انجام دیتے ہیں۔

ماہر مکینکس

29 سالہ السنرکا کہنا ہے کہ وہ بچپن سے ہی مکینکنگ سے محبت کرتے ہیں انہوں نے مزید کہا کہ اس ٹیلنٹ نے مجھے ایک خصوصی ورکشاپ کھولنے کا حوصلہ دیا، اس میں کاروں کے انجن تیار کیے جاتے ہیں اور مشینوں اور گیئرز کو تبدیل کرکے، ایک کار سے دوسری کار میں تبدیل کیاجاتا۔ کاروں کو تبدیل کرتا ہے۔

اس نے "پینٹنگ اور سپلائی" کاروں کا مطلب بھی واضح کیا کہ یہ طاقتور مشینیں لگانے کا عمل ہے جس کا وہ دوسری کاروں کے ساتھ تبادلہ کرتے ہیں۔ امریکہ سے کچھ پرزہ جات کا آرڈر دے کر منگوائے جاتے ہیں۔ خاص طور پر ایسی طاقتورمشینیں جنہیں نوجوان پسند کرتے ہیں۔ اس طرح کے آلات سے تیار کاریں طاقت ور اور تیز رفتار ہوتی ہیں۔

السنر نے بتایا کہ جس ہائی لیکس کو وہ خود چلا رہے تھے اس کا انجن 120 ہارس پاور کا تھا جو بڑھ کر 700 ہارس پاور تک پہنچ گیا۔ حادثے کے بعد اس نے گاڑی کو مکمل طور پر کھول دیااور مقابلے میں حصہ لینے کے لیے اس کی مشین میں تبدیلی کی۔ 4 دن کے اندر اس کو دوبارہ تیار کیا۔ اسے مقابلے میں شرکت کے لیے تیار کیا گیا اور تمام خرابیوں کو درست کر دیا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں