حوثیوں کی گولہ باری سے سعودی عرب کے علاقے جازان میں دو افراد جاں بحق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

یمن میں آئینی حکومت کی حمایت کرنے والےعرب اتحاد نے جمعہ کو بتایا کہ جازان پر حوثی ملیشیا کی جانب سے فائر کیے گئے ایک گولے کے گرنے کے نتیجے میں ایک سعودی شہری اور ایک یمنی باشندے کی ہلاکت کی تصدیق کی گئی ہے۔ جنرل ڈائریکٹوریٹ آف سول ڈیفنس کے ترجمان لیفٹیننٹ جنرل کرنل محمد الحمادی نے بتایا کہ گولہ ناری سے سات شہری زخمی ہوئے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ حوثیوں کی گولہ باری سے دو دکانوں اور 12 گاڑیوں کو بھی نقصان پہنچا۔

ترجمان نے کہا کہ عرب اتحاد نے بین الاقوامی اور انسانی قانون کے دائرہ کار میں بڑے پیمانے پر فوجی آپریشن کی تیاری شروع کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ وہ مملکت کی سرزمین پر شہریوں اور رہائشیوں دونوں کے تحفظ کے لیے سختی سے نمٹیں گے۔

عرب اتحاد نے کل جمعہ کو کہا تھا کہ جازان کے علاقے میں ایک سرحدی گاؤں پر گولہ گرنے سے شہری املاک کو نقصان پہنچا جب کہ نجران کے علاقے میں ایک ورکشاپ کو بھی نشانہ بنایا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں