ویانا : ایرانی جوہری مذاکرات کا آٹھواں دور آج ہو رہا ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

آسٹریا کے دارالحکومت ویانا میں آج جوہری مذاکرات کے آٹھویں دور کا آغاز ہو رہا ہے۔ ایران کا کہنا ہے کہ اس کی مذاکراتی ٹیم اپنے مشن کے لیے بھرپور طور سے تیار ہے۔ مزید یہ کہ بات چیت جاری رکھنے کے لیے ضروری ہوا تو ایرانی مذاکرات کار ویانا میں ہی رہیں گے۔

ایرانی خبر رساں ایجنسی "فارس" نے ذمے دار ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ تہران مذاکرات میں پیش رفت کے لیے تیار ہے بشرط یہ کہ دیگر فریق بھی با مقصد مکالمے پر توجہ مرکوز کریں۔ ویانا بات چیت میں پیش رفت کا انحصار اس میں شریک دیگر ممالک کی روش پر ہے۔

واضح رہے کہ ایران کا دعویٰ ہے کہ وہ ابھی تک جوہری معاہدے کا پابند ہے۔ مزید یہ کہ ویانا بات چیت ناکام ہونے کی صورت میں بھی وہ اپنے پاس یورینیم کی افزودگی کے تناسب کو 60% سے زیادہ نہیں بڑھائے گا۔

ادھر تل ابیب میں اسرائیلی حکام نے شکوک کا اظہار کرتے ہوئے واشنگٹن کو بھی بعض معلومات میں شریک کیا ہے۔ ان معلومات کے مطابق ایران یورینیم کی افزودگی کا تناسب بڑھا کر 90% تک لے جانے کا اراردہ رکھتا ہے۔ یہ وہ تناسب ہے جہاں پہنچ کر یورینیم کو عسکری مقاصد کے واسطے استعمال کیا جا سکتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں