ایران کو ہمسایہ ملک کے طور پر اپنا منفی کردار ترک کرنا ہو گا: شاہ سلمان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب کے فرمانروا شاہ سلمان نے امید ظاہر کی ہے کہ ایران ’عدم استحکام اور جارحیت‘ کی پالیسی ترک کرے گا اور مشرق وسطیٰ میں امن اور استحکام لانے میں تعاون کرے گا۔

ان خیالات کا اظہار سعودی فرمانروا نے بدھ کو مجلس شوریٰ سے سالانہ خطاب میں کہا کہ ’ایران مملکت کا ہمسایہ ملک ہے۔ ہم امید کرتے ہیں کہ یہ منفی پالیسی اور خطے میں اپنا برتاؤ تبدیل کرتے ہوئے بات چیت اور تعاون کا راستہ اختیار کرے گا۔‘

کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے پیش نظر شاہ سلمان نے ویڈیو لنک کے ذریعے مجلس شوریٰ سے خطاب کیا۔

اپنے خطاب میں وسیع موضوعات پر بات کرتے ہوئے شاہ سلمان نے یمن تنازع کے خاتمے کے لیے سعودی عرب کی جانب سے پہل کرنے اور لبنان کے عوام کی حمایت کا عہد کیا جنہیں معاشی بحران اور حزب اللہ سے سکیورٹی خطرات کا سامنا ہے۔

وژن 2030

خادم حرمین شریفین نے باور کرایا کہ مجلس شوری جو کام کر رہی ہے وہ گراں قدر ہے۔ مملکت ویژن 2030 پروگرام ایک مضبوط معیشت تخلیق دینے کے لیے کوشاں ہے جو بین الاقوامی تبدیلیوں کا مقابلہ کر سکے۔ ویژن پروگرام کے دوسرے مرحلے کا آغاز کامیابیوں کے پہیے کو آگے بڑھا رہا ہے۔ پٹرولیم کی منڈی کا استحکام توانائی کے میدان میں سعودی عرب کی حکمت عملی کے ارتکازی نقطوں میں سے ہے۔

عرب اور اسلامی دنیا میں مقام

شاہ سلمان کے مطابق عالمی سطح پر سعودی عرب کا مقام عرب اور اسلامی دنیا میں اس کے مقام کے ساتھ وابستہ ہے۔
خادم حرمین شریفین نے کرونا کی وبا کا مقابلہ کرنے کے سلسلے میں سعودی شہریوں اور غیر ملکی مقیم کارکنان کا شکریہ ادا کیا۔ اسی طرح تمام سیکٹروں میں ہر فوجی کے لیے اظہار تشکر کیا۔

حزب اللہ کے غلبے پر روک لگانا

خادم حرمین شریفین نے باور کرایا کہ سعودی عرب اس مشکل وقت میں برادر لبنانی عوام کے ساتھ کھڑا ہے۔ انہوں نے تمام لبنانی قیادت اور رہ نماؤں پر زور دیا کہ وہ اپنے عوام کے مفادات کو پہلے درجے کا مقام دیں۔ علاوہ ازیں لبنانی ریاست پر دہشت گرد تنظیم حزب اللہ کے غلبے کا سلسلہ روکیں۔

بین الاقوامی سطح پر شاہ سلمان نے افغانستان کے امن و استحکام کی اہمیت پر زور دیا تا کہ وہ دہشت گرد تنظیموں کی آماج گاہ نہ بن سکے۔

یاد رہے کہ خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزہز آل سعود نے مجلس شوری کے آٹھویں اجلاس کا ورچوئل کال کے ذریعے افتتاح کیا۔ اس موقع پر سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان بھی موجود تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں