حرمین شریفین میں سماجی دوری کے اسٹیکر دوبارہ لگا دیے گئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

حرمین کے امور کی اعلی انتظامیہ نے مسجد حرام (مکہ مکرمہ) اور مسجد نبوی (مدینہ منورہ) میں نمازیوں کے بیچ جسمانی فاصلے کی نشانیاں پھر سے لگا دی ہیں۔ یہ اُن احتیاطی اقدامات کا حصہ ہے جن کا مقصد نمازیوں کے بیچ دوری کو لاگو کرنا ہے۔ آج جمعرات کے روز سے نمازوں کے مصلوں کو بھی تقسیم کر دیا گیا ہے۔ یہ پیش رفت مملکت میں کرونا وائرس اور اس کی مختلف صورتوں کے کیسوں میں ایک بار پھر اضافے کے بعد دیکھنے میں آ رہی ہے۔

اعلی انتظامیہ کی جانب سے نمازیوں اور زائرین کو مطلوب تمام خدمات پیش کی جا رہی ہیں۔ اس دوران میں سینی ٹائزیشن کا عمل بڑھا دیا گیا ہے۔

حرمین کی اعلی انتظامیہ نے باور کرایا ہے کہ وہ مسجد حرام اور مسجد نبوی میں مختلف حکومتی اداروں اور سیکورٹی و صحت کے سیکٹروں کے ساتھ فعال شراکت داری کے ساتھ رابطہ کاری سے کام کر رہی ہے۔ اس کا مقصد ہنگامی صورت حال میں اعلی ترین معیارات اور تیزی کے ساتھ نبرد آزما ہونا ہے۔

حرمین کی اعلی انتظامیہ نے تمام لوگوں پر زور دیا ہے کہ وہ احتیاطی اقدامات اور حفاظتی تدابیر پر عمل کریں۔ ان میں سماجی فاصلہ اور ماسک لگانا شامل ہے۔ علاوہ ازیں ہدایت کی گئی ہے کہ معتمرین اور نمازیوں کی سلامتی کی خاطر بھیڑ اور ہجوم کے مقامات سے گریز کریں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں