مغربی کنارہ: اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے فلسطینی نوجوان جاں بحق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مغربی کنارے کے شہر نابلس کے جنوب میں واقع قصبے بیتا میں آج جمعے کے روز اسرائیلی فوج کے ساتھ جھڑپوں میں درجنوں فلسطینی شہری زخمی ہو گئے۔ فلسطینی سرکاری خبر رساں ایجنسی نے نابلس میں ہلال احمر تنظیم کے ایمرجنسی ڈائریکٹر احمد جبریل کے حوالے سے بتایا کہ زخمیوں میں ایک کو براہ راست گولی لگی اور سات افراد کا آنسو گیس کی شیلنگ سے دم گھٹ گیا۔

نابلس کے مشرق میں بیت دجن گاؤں میں بھی اسرائیلی فوج کے ساتھ جھڑپوں میں 44 فلسطینی شہری زخمی ہو گئے۔

دوسری جانب اسرائیلی فوج نے بتایا ہے کہ اس کے اہل کاروں نے مقبوضہ مغربی کنارے میں ایک فلسطینی کو گولی مار دی جس کے قبضے میں ایک چھرا موجود تھا۔ فوج کی جانب سے جاری بیان کے مطابق مذکورہ فلسطینی ایک گاڑی میں یہودی بستی اریئل کے نزدیک ایک چوک پر پہنچا اور پھر اتر کر بسوں کے ایک اسٹیشن کی جانب دوڑ پڑا جہاں اسرائیلی شہری اور فوجی کھڑے ہوئے تھے۔

فلسطینی وزارت صحت کے مطابق مذکورہ فلسطینی کے پیٹ کے نچلے حصے میں گولی لگی اور نوجوان دم توڑ گیا۔ اس کا تعلق بنی حسان کے علاقے سے ہے۔

اس سے قبل اسرائیلی اخبار "یروشلم پوسٹ" نے بتایا تھا کہ اسرائیلی سیکورٹی فورسز نے مغربی کنارے میں ایک فلسطینی پر فائرنگ کی ہے۔ اخبار نے مزید بتایا کہ نوجوان نے چھرے سے حملے کی کوشش کی تاہم اس کے نتیجے میں کوئی زخمی نہیں ہوا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں