سعودی عرب: منی لانڈرنگ کے 6 ملزمان کو 31 سال قید اور 152 ملین جرمانہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی پبلک پراسیکیوشن کے ایک سرکاری ذریعے نے انکشاف کیا ہے کہ 6 مدعا علیہان کو منی لانڈرنگ کے ایک مقدمے میں سزا سنائی گئی ہے۔ عدالتی فیصلے کے مطابق ملزمان کو 31 سال قید، رقوم ضبط کرنے اور 152 ملین ریال سے زائد جرمانے کا حکم جاری کیا ہے۔ یہ منی لانڈرنگ کے ذریعے بھیجی گئی رقم کی کل مالیت کے مساوی ہے۔

ذرائع نے وضاحت کی کہ تحقیقات سے ثابت ہوا کہ شہری، تجارتی اداروں (فرنیچر سازی ، پھولوں کے لیے خصوصی کمپنیوں اور متعدد جعلی اداروں کے مالکان نے 10,000 ریال کی ماہانہ فیس کے عوض اپنے بینک اکاؤنٹس کو منی لانڈرنگ کے لیے استعمال کرتے تھے۔ ان غیر قانونی رقوم کو سعودی عرب سے باہر منتقل کرنے کا کا تجارتی سرگرمی کی چھتری تلے جعلی کمپنیوں کے ذریعے کیا جاتا تھا جو انسداد منی لانڈرنگ قانون کے آرٹیکل 2 کے مطابق ایک مجرمانہ فعل ہے۔

عدالت نے ملزمان کے خلاف فیصلہ صادر کرتے ہوئے کہا کہ مقامی ملزمان قید کی مدت کے برابر بیرون ملک سفر نہیں کرسکیں گے جب کہ غیرملکی ملزمان کو سزا پوری ہونے کے بعد ملک بدر کر دیا جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں