اسرائیل نے لبنان سے آنے والا حزب اللہ کا ڈرون مارگرایا!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی فوج نے لبنان کی شیعہ ملیشیا حزب اللہ کی جانب سے داغے گئے ایک ڈرون کو مارگرایا ہے۔ یہ لبنان سے اسرائیلی علاقے میں داخل ہوا تھا۔

اسرائیلی فوج نے منگل کے روز ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ ’’حزب اللہ کا ڈرون آج لبنان سے اسرائیل میں داخل ہوا تھا۔ہمارے فوجیوں نے اس پورے واقعے کے دوران میں اس ڈرون کی نگرانی کی ہے‘‘۔

اس نے مزید کہا کہ اسرائیل کی دفاعی افواج دہشت گردوں کی جانب سے ملک کی خودمختاری کی خلاف ورزی کی کسی بھی کوشش کے توڑ کے لیے کارروائی جاری رکھیں گی۔

اسرائیل ایران کی حمایت یافتہ حزب اللہ کو اپنا دیرینہ دشمن سمجھتا ہے اور طویل عرصے سے خبردار کررہا ہے کہ وہ لبنانی ملیشیا اور اس کے مرکزی حامی اور پشتیبان ایران کی حملوں کی دھمکیوں کا’’اگلی جنگ‘‘میں انتہائی سخت جواب دے گا۔

حزب اللہ کو طویل عرصے سے ایران کی جانب سے مالی اور فوجی امداد مل رہی ہے۔ اسرائیل کے دفاعی حکام کا اندازہ ہے کہ ایران حزب اللہ پر سالانہ قریباً ایک ارب ڈالر خرچ کرتا ہے۔

لبنان اور اسرائیل اب بھی باضابطہ طور پر حالتِ جنگ میں ہیں اور طویل عرصے سے اپنی زمینی اور سمندری سرحدوں پر ایک دوسرے کا مقابلہ کر رہے ہیں۔ اسرائیل نے حالیہ برسوں میں ہمسایہ ملک شام میں ایران کی مشتبہ فوجی تعیناتیوں یا حزب اللہ کو ہتھیاروں کی منتقلی کے خلاف سیکڑوں فضائی حملے کیے ہیں۔ان میں فوجی گاڑیوں یا تنصیبات کو نشانہ بنایا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں