عراق: داعش مخالف اتحاد نے فوجی اڈے کونشانہ بنانے والے دومسلح ڈرون مارگرائے!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

عراق میں داعش کے خلاف لڑنے والے اتحاد نے مغربی صوبہ الانبارمیں ایک فضائی اڈے کو نشانہ بنانے والے دو مسلح ڈرون مار گرائے ہیں۔

امریکا کی قیادت میں اس اتحاد کے ایک عہدہ دار نے بتایا کہ منگل کو علی الصباح عراق کے عین الاسد ایئربیس پر دھماکا خیز مواد سے لدے دو فکسڈ ونگ ڈرون سے حملہ کرنے کی کوشش کی گئی تھی لیکن ان دونوں ڈرونزکو تباہ کردیا گیا ہے۔

انھوں نے کہا کہ یہ ڈرون حملہ ناکام رہا ہے اور کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔

عراق میں داعش مخالف اتحاد پر گذشتہ 24 گھنٹے میں یہ دوسرا ڈرون حملہ ہے۔ پیر کے روز اتحاد نے بغداد کے بین الاقوامی ہوائی اڈے میں فوجیوں کے زیراستعمال احاطے کو نشانہ بنانے کے لیے چھوڑے گئے دو مسلح ڈرونز کومار گرایا تھا۔

یہ حملے ایسے وقت میں کیے گئے ہیں جب ایران اور مشرقِ اوسط میں اس کے اتحادیوں نے بغداد ہوائی اڈے پر امریکی ڈرون حملے میں ایرانی کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی اور ان کے عراقی معاون ابومہدی المہندس کے قتل کی دوسری برسی کے موقع پرپیرکو جذباتی یادگاری تقریبات منعقد کی ہیں۔

امریکا کی قیادت میں اتحادی فوجیوں نے گذشتہ ماہ کے اوائل میں عراق میں اپنا جنگی مشن ختم کردیا تھا اور اب وہ عراقی سکیورٹی فورسز کے لیے تربیتی اور مشاورتی کردار ادا کررہے ہیں۔

فوجی عہدہ دار کا کہنا تھا کہ اگرچہ ہم نے عراق میں اپنا جنگی مشن ختم کر دیا ہے لیکن ہم اپنے دفاع کا فطری حق محفوظ رکھتے ہیں۔انھوں نے کہا کہ یہ عراقی تنصیبات کے خلاف اورعراقی عوام اور ان کی حفاظت کرنے والی فوج کے خلاف حملہ ہے جبکہ ہم عراقی اڈوں پر کم سے کم قدم رکھتے ہیں-اب عراق میں اس اتحاد کے اپنے اڈے نہیں ہیں‘‘۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں