عرب اتحاد کی بم باری سے ڈرون طیارے بنانے والی حوثیوں کی دو ورکشاپس تباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

یمن میں آئینی حکومت کے حامی عرب اتحاد نے بدھ کے روز اعلان کیا ہے کہ صنعا میں حوثی ملیشیا کے عسکری اور قانونی اہداف کو فضائی حملوں کا نشانہ بنایا گیا۔ اس کے نتیجے میں ڈرون طیاروں کو اسمبل کرنے اور ان میں دھماکا خیز مواد نصب کرنے کے لیے استعمال ہونے والی دو ورکشاپس اور ان طیاروں کے دو ڈپو تباہ ہو گئے۔

عرب اتحاد نے باور کرایا کہ شہریوں اور شہری تنصیبات کو جانبی نقصانات سے محفوظ رکھنے کے لیے حفاظتی اقدامات کیے جا رہے ہیں۔

حوثی جنگجو ۔ فائل فوٹو
حوثی جنگجو ۔ فائل فوٹو

ادھر میدان جنگ میں موجود ذرائع نے ’’العربیہ‘‘ اور ’’الحدث‘‘ نیوز چینلز کو بتایا کہ عرب اتحاد کے لڑاکا طیاروں نے مارب صوبے کے جنوبی محاذ پر حوثیوں کی کمک اور مورچوں کو بم باری کا نشانہ بنایا۔اس دوران میں حوثیوں کی ایک بکتر بند گاڑی اور تین دیگر عسکری گاڑیاں تباہ ہو گئیں۔

ذرائع کے مطابق حملوں میں حوثی رہ نماؤں کے ایک اجلاس کو بھی نشانہ بنایا گیا جس کے نتیجے میں جنوبی محاذ پر حوثیوں کا ایک فیلڈ کمانڈر مارا گیا۔ عرب اتحاد نے شہریوں سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ نشانہ بنائے جانے والے مقامات سے دور رہیں۔ اتحاد کے مطابق تمام عسکری کارروائیاں بین الاقوامی قانون کا خیال رکھ کر کی جا رہی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں