ترکی آل الشیخ کا امریکا میں علاج، ولی عہد اورچاہنے والوں سے اظہار تشکر

’یہ جسم بار بار کی سرجری کا عادی ہوچکا ہے‘

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکا میں زیرعلاج سعودی عرب میں تفریح کی جنرل اتھارٹی کے سربراہ ترکی آل الشیخ نے نیویارک میں سرجری کے بعد عوام کو اپنی صحت کے بارے میں اطمینان دلایا ہے۔ کل بدھ کے روز ٹویٹر پر اپنے اکاؤنٹ کے ذریعے لکھا انہوں نے لکھا کہ "الحمد للہ میں ٹھیک ہوں۔ مسلسل سرپرستی پر عزت مآب ولی عہد کا شکر گذار ہوں۔ اس کے علاوہ ہر چاہنے والے اور ہر نفرت کرنے والے کا شکریہ

انہوں نے مزید لکھا کہ "یہ جسم زخموں کی چھلنی کا عادی ہے،لیکن ہر بار کی سرجری کے بعد یقین اور عزم بڑھ جاتا ہے۔ میں تمہیں کسی چاہنے والےیا عزیز میں خدا سے نفرت نہیں دیکھتا۔"

خیال رہے کہ ترکی آل الشیخ کے امریکا میں علاج کے دوران مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ ’ٹویٹر‘ پر #Turki_AlSikh ہیش ٹیگ پر پوسٹس اور رد عمل کی ایک لہرسامنے آئی جس میں ان کی جلد صحت یابی اور وطن واپسی کے لیے دعائیں کی گئیں۔

قابل ذکر ہے کہ ترکی آل الشیخ سنہ 2016 سے اس مرض میں مبتلا ہیں اور ان کے 2018 میں 5 آپریشن ہوئے اور ان میں سے ایک آپریشن طبی خرابی کی وجہ سے ناکام ہو گیا جس سے وہ اس وقت تک مبتلا ہیں۔

جنرل اتھارٹی فار انٹرٹینمنٹ کے سربراہ 20 جون 2020 کو فیس بک پر اپنے آفیشل اکاؤنٹ کے ذریعے اپنی بیماری کے بارے میں بات کرنے کے لیے واپس آئے اور کہا کہ میں ابھی تک اس بیماری سے لڑ رہا ہوں، مجھے شکست پسند نہیں۔ خدا میرے ساتھ ہے۔ جبکہ آل الشیخ نے ابھی تک اپنی بیماری کی نوعیت نہیں بتائی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں