مسجد حرام میں معتمرین کی آمد پر جراثیم کش اسپرے کا عمل بڑھا دیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

خدمات کے ایک مربوط نظام اور احتیاطی تدابیر کے اطلاق کے جلو میں دوسرے تعلیمی سمسٹر کی وسط مدتی تعطیلات کے دوران عمرہ اور نماز کے لیے عمرہ زائرین کی آمد کا سلسلہ جاری ہے۔ دوسری طرف انتظامیہ نے مسجد حرام میں آنے والے نمازیوں اور زائرین کے لیے’ایس اوپیز‘ مزید سخت کردیے گئے ہیں۔ مسجد حرام میں زائرین کے لیے کرونا وبا کےخطرے کے پیش نظرجراثیم کش اسپرے کا عمل بڑھا دیا ہے۔

صدارت عامہ برائے امور حرمین شریفین کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ مسجد حرام میں وبائی مرض کے پیش نظر سینی ٹائزنگ کے لیے قائم کردہ ٹیموں کی تعداد بڑھا دی گئی ہے تاکہ اللہ کےگھر میں آنے والے نمازیوں اور زائرین کو مکمل صحت مند ماحول فراہم کیا جا سکے۔

صدارت عامہ کے مطابق تقریباً 45 ٹیمیں مسجد کے تمام اطراف اس کے بیرونی صحنوں اور بیت الخلاء کو جراثیم سے پاک کرنے کے لیے چوبیس گھنٹے کام کر رہی ہیں۔ روزانہ 25,000 لیٹر سے زیادہ جراثیم کش اسپرے استعمال کر رہی ہیں۔

مسجد حرام کے اندر جراثیم کشی کے لیے خصوصی کارکنوں کی تعداد600 تک پہنچ گئی ہے۔ 500 سے زیادہ جدید خودکار آلات جن میں سینسر کی خصوصیت کے ساتھ ہاتھوں کو جراثیم سے پاک کیا گیا جاتا کا استعمال کیاجاتا ہے۔ کیڑے تلف کرنےکے لیے 50 پمپس فراہم کیے گئے ہیں اور 150 سیزر موب ڈیوائسز، 20 بائیو کیئر ڈیوائس، 11 سمارٹ روبوٹس، 550 ہینڈ پمپ پورے مسجد کے ماحول اور سطحوں کو جراثیم سے پاک کرنے کے لیے مہیا کیے گئے ہیں۔

دوسری جانب قومی کمیٹی برائے حج و عمرہ کے رکن اور مکہ مکرمہ میں ہوٹلز کمیٹی کے ممبر ہانی العمیری نے مڈ اسکول کی دوسری چھٹیوں کے دوران مکہ مکرمہ میں ہوٹلوں، ٹرانسپورٹیشن، ریستوراں اور خریداری کے منافع کا تخمینہ تقریباً 15 ملین ریال لگایا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ 1200 سے زائد ہوٹل ہیں جن میں 270,000 سے زیادہ کمرے ہیں۔ ان کمروں میں اعلیٰ معیار کی سہولیات اور سروسز فراہم کی گئی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں